کانٹیکٹ لینز

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
ایک لڑکی آئینے میں خود کا دیدار کرتے ہوئے کانٹیکٹ لینز کو کو انکھوں پر چڑھاتے ہوئے دیکھی جا سکتی ہے۔

کانٹیکٹ لینز (انگریزی: Contact lens) پلاسٹک کے پتلے ٹکڑے ہوتے ہیں جو براہ راست آنکھ پر پہنے جاتے ہیں تاکہ بینائی کے بعض مسائل کو درست کیا جا سکے۔ لاکھوں لوگ ٰیہ پہنتے ہیں، خاص طور پر وہ لوگ جو فعال طرز زندگی کی قیادت کرتے ہیں اور اپنے چہرے پر شیشے کا ایک جوڑا رکھے بغیر کرکرا، صاف بینائی چاہتے ہیں۔ زیادہ تر لوگ کانٹیکٹ لینز پہننے کے قابل ہوتے ہیں اور شیشے کی مدد کے بغیر دیکھنے کے قابل ہونے کی آزادی سے لطف اندوز ہوتے ہیں۔[1]

کانٹیکٹ لینز استعمال کرتے وقت آپ کی آنکھیں سرخ ہونے کی ایک بڑی وجہ انہیں اکثر پہننا ہے۔ آنکھ میں کانٹیکٹ لینز کو زیادہ دیر تک چھوڑنے سے آنکھ میں سیال کی مقدار اور آکسیجن کی کمی ہوتی ہے۔ اس کے نتیجے میں آنکھ خون سے اضافی آکسیجن حاصل کرنے کی کوشش کرے گی۔ اس کی وجہ سے خون کی شریانیں زیادہ دکھائی دیتی ہیں اور آنکھیں سرخ ہونے لگتی ہیں۔ تاہم، یہ ممکن ہے کہ اس حالت کی دیگر وجوہات بھی ہوں۔[2]

نرم لینز کی سب سے مشہور قسمیں ماہانہ، دو ہفتہ وار اور روزانہ کے کانٹیکٹ لینز ہیں۔ کون سا انتخاب کریں؟ اگر آپ نسبتاً کم بجٹ پر ہیں، تو اپنے ماہر امراض چشم سے پوچھیں کہ کیا آپ طویل مدتی لینز پہن سکتے ہیں – وہ سستے ہیں۔ تاہم، اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کیے بغیر لینز کی قسم کو تبدیل کرنے کے بارے میں فیصلہ نہ کریں۔[3]


مزید دیکھیے[ترمیم]


حوالہ جات[ترمیم]