کتاب الخراج

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

کتاب الخراج امام ابو یوسف کی مشہور تصنیف کتاب الخراج ہے ۔
یہ کتاب اس موضوع پر سب سے پہلے لکھی گئی جس کو ہارون الرشید کی درخواست پر تحریر کیا گیا تھا۔ اس میں مختلف مضامین ہیں لیکن زیادہ خراج کے مسائل ہیں۔ اور اس لیے اس کو ہر زمانہ کا قانونِ مال گزاری کہہ سکتے ہیں۔ اس کتاب میں زمین کے اقسام، لگان کی مختلف شرحیں کاشتکاروں کی حیثیتوں کا اختلاف، پیداوار کی قسمیں اور اس قسم کے دوسرے مسائل کو بہت ہی خوبی اور دقتِ نظر سے منضبط کیا اور ان کے قواعد اور ہدایتوں کے ساتھ جابجا ان ابتریوں کا ذکر ہے جو انتظامات سلطنت میں موجود تھیں۔ اور ان پر نہایت بے باکی کے ساتھ خلیفۂ وقت کو متوجہ کیا ہے۔[1]

کتاب الخراج کا اردو ترجمہ[2]

حوالہ جات[ترمیم]