کرس کائل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search


کرس کائل
Chris Kyle January 2012.jpg
کائل جنوری 2012 میں کتاب پر دستخط کرتے ہوئے
پیدائشی نامChristopher Scott Kyle[1]
عرف"Chris", "Legend", "Devil of Ramadi",
پیدائش8 اپریل 1974(1974-04-08)
اوڈیسا، ٹیکساس, U.S.
وفاتفروری 2، 2013(2013-20-20) (عمر  38 سال)
ایراتھ کاؤنٹی، ٹیکساس, U.S.
مدفن
وفاداری United States of America
سروس/شاخFlag of the United States Navy (unofficial proportions).svg United States Navy
سالہائے فعالیت1999–2009
درجہCPO collar.png Chief Petty Officer[3]
یونٹUnited States Navy Special Warfare insignia.png United States Navy SEALs Sniper element, platoon "Charlie", SEAL Team 3
مقابلے/جنگیںIraq War
اعزازاتSilver Star Medal ribbon.svg Silver Star Medal (2)
Bronze Star Medal ribbon with "V" device, 1st award.svg Bronze Star Medal (Valor; 5)
Navy and Marine Corps Commendation Medal ribbon.svg Navy and Marine Corps Commendation Medal (1)
Navy and Marine Corps Achievement Medal ribbon.svg Navy and Marine Corps Achievement Medal (2)[3][4]
شریک حیاتTaya Kyle[5]
تعلقاتWayne Kenneth Kyle (father)
Deby Lynn Mercer (mother)
Children: 2[6]
دیگر کامAmerican Sniper (2012)
American Gun (2013)

کرسٹوفرسکاٹ یا کرس کائل(Chris Kyle) کا تعلق امریکہ فوج سے تھا۔کرس 8 اپریل 1974 کو پیدا ہوا اور 2 فروری 2013 میں ہلاک ہو گیا۔ کرس یو ایس نیوی سیل میں کام کرتا تھا۔کرس کو امریکی فوجی تاریخ کا مہلک ترین قاتل کہا جاتا ہے۔ کرس نے 4 بار عراق اور افغانستان کا دورہ کیا۔ اس کے کھاتے میں 160 تو تصدیق شدہ مقتولین درج ہیں۔ کرس کو بہت سے اعزازات سے بھی نوازا گیا۔ اسے دو سلور سٹار میڈل، پانچ برونس سٹار میڈل اور بہت سے دیگر اعزازات شامل ہیں۔ 2009 میں کرس کو اعزازی طور ریٹائرڈ ہو گیا۔ ریٹائر ہو کر اس نے اپنی سوانح حیات امریکن سنائیپر (American Sniper)کے نام سے لکھی جو جنوری 2012 میں چھپی۔ یہ سوانح حیات بہت زیادہ فروخت ہوئی۔2 فروری 2013 کو کرس کو امریکہ میں قتل کر دیا گیا۔ کرس کائل پر ایک فلم امریکن سنائپر بھی بنی ہے جن سے کافی بزنس کیا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Bernstein، Adam (February 4, 2013). "Chris Kyle, Navy Seal and author of 'American Sniper', dies". واشنگٹن پوسٹ. Christopher Scott Kyle was born in 1974 
  2. Jamie Stengle؛ Paul J. Weber؛ Angela K. Brown (February 12, 2013). "Procession escorts ex-Navy SEAL Kyle to burial". Army Times. Associated Press. اخذ شدہ بتاریخ February 15, 2013. 
  3. ^ ا ب Buiso, Gray (January 1, 2012). "Meet the big shot - SEAL is America's deadliest sniper". New York Post. اخذ شدہ بتاریخ January 3, 2012. 
  4. Chris Kyle (March 24, 2010). "Chris Kyle from HarperCollins Publishers". Harpercollins.com. مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ February 4, 2013.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  5. "Taya Renae Kyle profile". Cemetery.state.tx.us. مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ July 22, 2013.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  6. "'American Sniper' Widow Recalls Heartbreaking Moment Kids Learned Navy SEAL Dad Chris Kyle Had Been Killed". Christian Post. مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ January 30, 2015.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)