کرکٹ عالمی کپ 1996ء

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
کرکٹ عالمی کپ 1996
1996 Wills World Cup
فائل:Worldcupdr96.png
تاریخ14 فروری – 17 مارچ
منتظمانٹرنیشنل کرکٹ کونسل
کرکٹ طرزایک روزہ کرکٹ
ٹورنامنٹ طرزراؤنڈ روبن اور Knockout
میزبانپاکستان
بھارت
سری لنکا
فاتحFlag of سری لنکا سری لنکا (1 بار)
شریک ٹیمیں12
کل مقابلے37
بہترین کھلاڑیFlag of سری لنکا سنتھ جے سوریا
کثیر رنزFlag of بھارت سچن تندولکر (523)
کثیر وکٹیںFlag of بھارت انیل کمبل (15)
1992
1999

میزبان شہر اور میدان[ترمیم]

بھارت نے 17 میدانوں پر 17 مقابلوں، پاکستان نے 6 میدانوں پر 16 مقابلوں اور سری لنکا نے 3 میدانوں پر 4 مقابلوں کی میزبانی کی۔

بھارت[ترمیم]

شہر میدان گنجائش مقابلے
کولکاتہ، مغربی بنگال ایڈن گارڈنز 120,000 1
کانپور، اتر پردیش Green Park 45,000 1
اجیت گڑھ، Punjab پنجاب کرکٹ ایسوسی آئی ایس بندرا اسٹیڈیم 40,000 1
بنگلور، کرناٹک ایم چناسوامی اسٹیڈیم 55,000 1
چینائی، تمل ناڈو ایم اے چدمبرم اسٹیڈیم 50,000 1
Hyderabad، تلنگانہ لال بہادر شاستری اسٹیڈیم 30,000 1
کٹک، اڑیسہ باراباتی اسٹیڈیم 25,000 1
گوالیر، مدھیہ پردیش کیپٹن روپ سنگھ اسٹیڈیم 55,000 1
وشاکھاپٹنم، آندھرا پردیش اندرا پریادرشنی اسٹیڈیم 25,000 1
پٹنہ، بہار (بھارت) معین الحق اسٹیڈیم 25,000 1
پونہ، مہاراشٹر Nehru Stadium 25,000 1
ممبئی، مہاراشٹر وانکھیڈے اسٹیڈیم 45,000 1
احمد آباد، گجرات (بھارت) سردار پٹیل اسٹیڈیم 48,000 1
وڈودرا، گجرات (بھارت) موتی باغ اسٹیڈیم 18,000 1
جے پور، راجستھان سوائی مان سنگھ اسٹیڈیم 30,000 1
ناگپور، مہاراشٹر ودربھ 40,000 1
دہلی، نئی دہلی فیروز شاہ کوٹلہ سٹیڈیم 48,000 1

پاکستان[ترمیم]

شہر میدان گنجائش مقابلے
پشاور، خیبر پختونخوا ارباب نیاز اسٹیڈیم 20,000 2
لاہور، پنجاب قذافی اسٹیڈیم 35,000 4
فیصل آباد، پنجاب اقبال اسٹیڈیم 25,000 3
گوجرانوالہ، پنجاب جناح اسٹیڈیم 20,000 1
کراچی، سندھ نیشنل اسٹیڈیم، کراچی 30,000 3
راولپنڈی، پنجاب راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم 25,000 3

سری لنکا[ترمیم]

شہر میدان گنجائش مقابلے
کینڈی اسگیریا اسٹیڈیم 25,000 1
کولمبو آر پریماداسا اسٹیڈیم 35,000 2
کولمبو سنہالی اسپورٹس کلب گراؤنڈ 10,000 1
Venues in Sri Lanka

گروپ مرحلہ[ترمیم]

گروپ اے[ترمیم]

ٹیم کھیلے پوائنٹ جیتے ہارے بلا نتیجہ برابر این آر آر
 سری لنکا 5 10 5 0 0 0 1.60
 آسٹریلیا 5 6 3 2 0 0 0.90
 بھارت 5 6 3 2 0 0 0.45
 ویسٹ انڈیز 5 4 2 3 0 0 −0.13
 زمبابوے 5 2 1 4 0 0 −0.93
 کینیا 5 2 1 4 0 0 −1.00
16 فروری
اسکور کارڈ
زمبابوے 
151/9 (50 اوور)
بمقابلہ
 ویسٹ انڈیز
155/4 (29.3 اوور)
شیرون کیمبل 47 (88)
پال سٹرانگ 4/40 (7.3 اوور)

17 فروری
اسکور کارڈ
بمقابلہ
Sri Lanka won by a walkover
آر پریماداسا اسٹیڈیم، کولمبو
امپائر: Mahboob Shah اور Cyril Mitchley
  • Australia forfeited the match due to safety concerns, اور were in Bombay at the time of the match.

18 فروری
اسکور کارڈ
کینیا 
199/6 (50 اوور)
بمقابلہ
 بھارت
203/3 (41.5 اوور)
سٹیو ٹکولو 65 (83)
انیل کمبلے 3/28 (10 اوور)
سچن تندولکر 127* (138)
سٹیو ٹکولو 1/26 (3 اوور)
India won by 7 wickets
باراباتی اسٹیڈیم، کٹک
امپائر: K. T. Francis اور David Shepherd
بہترین کھلاڑی: سچن تندولکر (Ind)

21 فروری
اسکور کارڈ
زمبابوے 
228/6 (50 اوور)
بمقابلہ
 سری لنکا
229/4 (37 اوور)
Alistair Campbell 75 (102)
چمنڈا واس 2/30 (10 اوور)
Sri Lanka won by 6 wickets
سنہالی اسپورٹس کلب گراؤنڈ، کولمبو
امپائر: Steve Dunne اور Mahboob Shah
بہترین کھلاڑی: اروندا ڈی سلوا (SL)

21 فروری
اسکور کارڈ
ویسٹ انڈیز 
173 (50 اوور)
بمقابلہ
 بھارت
174/5 (39.4 اوور)
رچی رچرڈسن 47 (70)
انیل کمبلے 3/35 (10 اوور)
سچن تندولکر 70 (91)
Roger Harper 2/34 (9 اوور)
India won by 5 wickets
کیپٹن روپ سنگھ اسٹیڈیم، گوالیر
امپائر: Khizer Hayat اور Ian Robinson
بہترین کھلاڑی: سچن تندولکر (Ind)

23 فروری
اسکور کارڈ
آسٹریلیا 
304/7 (50 اوور)
بمقابلہ
 کینیا
207/7 (50 اوور)
مارک واہ 130 (128)
Rajab Ali 3/45 (10 اوور)
کینیڈی اوٹینو 85 (137)
پال ریفل 2/18 (7 اوور)
Australia won by 97 runs
اندرا پریادرشنی اسٹیڈیم، وشاکھاپٹنم
امپائر: Cyril Mitchley اور David Shepherd
بہترین کھلاڑی: مارک واہ (Aus)

26 فروری
اسکور کارڈ
بمقابلہ
Sri Lanka won by a walkover
آر پریماداسا اسٹیڈیم، کولمبو
امپائر: Mahboob Shah اور V.K. Ramaswamy
  • West Indies forfeited the match due to safety concerns.

26 فروری
اسکور کارڈ
کینیا 
134 (49.4 اوور)
بمقابلہ
 زمبابوے
137/5 (42.2 اوور)
Dipak Chudasama 34 (66)
پال سٹرانگ 5/21 (9.4 اوور)
گرانٹ فلاور 45 (112)
Rajab Ali 3/22 (8 اوور)
Zimbabwe won by 5 wickets
معین الحق اسٹیڈیم، پٹنہ
امپائر: Khizer Hayat اور Cyril Mitchley
بہترین کھلاڑی: پال سٹرانگ (Zim)
  • This game was scheduled to be played on 25 فروری۔ That game started but was abandoned after 15.5 overs in the Zimbabwe innings.

27 فروری
اسکور کارڈ
آسٹریلیا 
258 (50 اوور)
بمقابلہ
 بھارت
242 (48 اوور)
مارک واہ 126 (135)
Venkatapathy Raju 2/48 (10 اوور)
Australia won by 16 runs
وانکھیڈے اسٹیڈیم، ممبئی
امپائر: Steve Dunne اور David Shepherd
بہترین کھلاڑی: مارک واہ (Aus)

29 فروری
اسکور کارڈ
کینیا 
166 (49.3 اوور)
بمقابلہ
 ویسٹ انڈیز
93 (35.2 اوور)
سٹیو ٹکولو 29 (50)
کورٹنی والش 3/46 (9 اوور)
Kenya won by 73 runs
Nehru Stadium، پونہ
امپائر: Khizer Hayat اور V.K. Ramaswamy
بہترین کھلاڑی: موریس اوڈمبے (Ken)

1 مارچ
اسکور کارڈ
زمبابوے 
154 all out (45.3 اوور)
بمقابلہ
 آسٹریلیا
158/2 (36 اوور)
اینڈی والر 67 (101)
شین وارن 4/34 (9.3 اوور)
مارک واہ 76* (109)
پال سٹرانگ 2/33 (10 اوور)
Australia won by 8 wickets
ودربھ کرکٹ ایسوسی ایشن گراؤنڈ، ناگپور
امپائر: Steve Dunne اور David Shepherd
بہترین کھلاڑی: شین وارن (Aus)

2 مارچ
اسکور کارڈ
بھارت 
271/3 (50 اوور)
بمقابلہ
 سری لنکا
272/4 (48.4 اوور)
Sri Lanka won by 6 wickets
فیروزشاہ کوٹلہ، دہلی
امپائر: Cyril Mitchley اور Ian Robinson
بہترین کھلاڑی: سنتھ جے سوریا (SL)

4 مارچ
اسکور کارڈ
آسٹریلیا 
229/6 (50 اوور)
بمقابلہ
 ویسٹ انڈیز
232/6 (48.5 اوور)
رکی پونٹنگ 102 (112)
کورٹنی والش 2/35 (9 اوور)
رچی رچرڈسن 93* (133)
مارک واہ 3/38 (10 اوور)
West Indies won by 4 wickets
سوائی مان سنگھ اسٹیڈیم، جے پور
امپائر: Mahboob Shah اور David Shepherd
بہترین کھلاڑی: رچی رچرڈسن (WI)

6 مارچ
اسکور کارڈ
بھارت 
247/5 (50 اوور)
بمقابلہ
 زمبابوے
207 all out (49.4 اوور)
ونود کامبلی 106 (110)
Charlie Lock 2/57 (10 اوور)
ہیتھ سٹریک 30 (39)
Venkatapathy Raju 3/30 (10 اوور)
India won by 40 runs
Green Park، کانپور
امپائر: Steve Bucknor اور Cyril Mitchley
بہترین کھلاڑی: اجے جادیجا (Ind)

6 مارچ
اسکور کارڈ
سری لنکا 
398/5 (50 اوور)
بمقابلہ
 کینیا
254/7 (50 اوور)
Sri Lanka won by 144 runs
اسگیریا اسٹیڈیم، کینڈی
امپائر: Steve Dunne اور V.K. Ramaswamy
بہترین کھلاڑی: اروندا ڈی سلوا (SL)
  • Sri Lanka's total of 398/5 surpassed England's 363/7 against Pakistan in 1992 as the highest score in all ODIs. The record stood until 12 مارچ 2006, when both Australia اور South Africa broke it in the same match۔ It remained a World Cup record until the کرکٹ عالمی کپ 2007ء، when India scored 413/5 against Bermuda۔[1]

گروپ بی[ترمیم]

ٹیم کھیلے پوائنٹ جیتے ہارے بلا نتیجہ برابر این آر آر
 جنوبی افریقا 10 5 5 0 0 0 2.04
 پاکستان 8 5 4 1 0 0 0.96
 نیوزی لینڈ 6 5 3 2 0 0 0.55
 انگلستان 4 5 2 3 0 0 0.08
 متحدہ عرب امارات 2 5 1 4 0 0 −1.83
 نیدرلینڈز 0 5 0 5 0 0 −1.92
14 فروری
اسکور کارڈ
نیوزی لینڈ 
239/6 (50 اوور)
بمقابلہ
 انگلستان
228/9 (50 اوور)
نیتھن ایسٹل 101 (132)
گریم ہک 2/45 (9 اوور)
گریم ہک 85 (102)
Dion Nash 3/26 (7 اوور)
New Zealand won by 11 runs
Gujarat Stadium، موٹیرا، احمد آباد
امپائر: B.C. Cooray اور Steve Randell
بہترین کھلاڑی: نیتھن ایسٹل (NZ)

16 فروری
اسکور کارڈ
جنوبی افریقا 
321/2 (50 اوور)
بمقابلہ
 متحدہ عرب امارات
152/8 (50 اوور)
گیری کرسٹن 188* (159)
Johanne Samarasekera 1/39 (9 اوور)
Arshad Laeeq 43 (79)
Brian McMillan 3/11 (8 اوور)
South Africa won by 169 runs
راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی
امپائر: Steve Bucknor اور V.K. Ramaswamy
بہترین کھلاڑی: گیری کرسٹن (SA)

17 فروری
اسکور کارڈ
نیوزی لینڈ 
307/8 (50 اوور)
بمقابلہ
 نیدرلینڈز
188/7 (50 اوور)
Craig Spearman 68 (59)
Steven Lubbers 3/48 (9 اوور)
New Zealand won by 119 runs
موتی باغ اسٹیڈیم، وڈودرا
امپائر: Khizer Hayat اور Ian Robinson
بہترین کھلاڑی: Craig Spearman (NZ)

18 فروری
اسکور کارڈ
متحدہ عرب امارات 
136 (48.3 اوور)
بمقابلہ
 انگلستان
140/2 (35 اوور)
گراہم تھورپ 44* (66)
Arshad Laeeq 1/25 (7 اوور)
England won by 8 wickets
ارباب نیاز اسٹیڈیم، پشاور
امپائر: B.C. Cooray اور V.K. Ramaswamy
بہترین کھلاڑی: نیل سمتھ (Eng)

20 فروری
اسکور کارڈ
نیوزی لینڈ 
177/9 (50 اوور)
بمقابلہ
 جنوبی افریقا
178/5 (37.3 اوور)
سٹیفن فلیمنگ 33 (79)
ایلن ڈونلڈ 3/34 (10 اوور)
Hansie Cronje 78 (64)
نیتھن ایسٹل 2/10 (3 اوور)
South Africa won by 5 wickets
اقبال اسٹیڈیم، فیصل آباد
امپائر: Steve Randell اور سرینیوساگرنم ونکتتاراگھون
بہترین کھلاڑی: Hansie Cronje (SA)

22 فروری
اسکور کارڈ
انگلستان 
279/4 (50 اوور)
بمقابلہ
 نیدرلینڈز
230/6 (50 اوور)
گریم ہک 104* (133)
Roland Lefebvre 1/40 (10 اوور)
Klaas van Noortwijk 64 (82)
فل ڈی فریٹاس 3/31 (10 اوور)
England won by 49 runs
ارباب نیاز اسٹیڈیم، پشاور
امپائر: Steve Bucknor اور K.T. Francis
بہترین کھلاڑی: گریم ہک (Eng)

24 فروری
اسکور کارڈ
متحدہ عرب امارات 
109/9 (33 اوور)
بمقابلہ
 پاکستان
112/1 (18 اوور)
Shaukat Dukanwala 21* (19)
Mushtaq Ahmed 3/16 (7 اوور)
Ijaz Ahmed 50* (57)
Johanne Samarasekera 1/17 (3 اوور)
Pakistan won by 9 wickets
Jinnah Stadium، گوجرانوالہ
امپائر: B.C. Cooray اور سرینیوساگرنم ونکتتاراگھون
بہترین کھلاڑی: Mushtaq Ahmed (Pak)

25 فروری
اسکور کارڈ
جنوبی افریقا 
230 all out (50 اوور)
بمقابلہ
 انگلستان
152 all out (44.3 اوور)
گیری کرسٹن 38 (60)
Peter Martin 3/33 (10 اوور)
گراہم تھورپ 46 (69)
شان پولاک 2/16 (8 اوور)
South Africa won by 78 runs
راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی
امپائر: Steve Randell اور Ian Robinson
بہترین کھلاڑی: جونٹی رہوڈز (SA)

26 فروری
اسکور کارڈ
نیدرلینڈز 
145/7 (50 اوور)
بمقابلہ
 پاکستان
151/2 (30.4 اوور)
سعید انور 83*
Peter Cantrell 1/18 (4 اوور)
Pakistan won by 8 wickets
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
امپائر: K.T. Francis اور Steve Bucknor
بہترین کھلاڑی: وقار یونس (Pak)

27 فروری
اسکور کارڈ
نیوزی لینڈ 
276/8 (47 اوور)
بمقابلہ
 متحدہ عرب امارات
167/9 (47 اوور)
راجر ٹوز 92 (112)
Azhar Saeed 3/45 (7 اوور)
New Zealand won by 109 runs
اقبال اسٹیڈیم، فیصل آباد
امپائر: B.C. Cooray اور سرینیوساگرنم ونکتتاراگھون
بہترین کھلاڑی: راجر ٹوز (NZ)
  • Match reduced to 47 overs a side due to heavy fog at the start of the match.

29 فروری
اسکور کارڈ
پاکستان 
242/6 (50 اوور)
بمقابلہ
 جنوبی افریقا
243/5 (44.2 اوور)
عامر سہیل 111 (139)
Hansie Cronje 2/20 (5 اوور)
Daryll Cullinan 65 (76)
وقار یونس 3/50 (8 اوور)
South Africa won by 5 wickets
نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی
امپائر: K.T. Francis اور Steve Bucknor
بہترین کھلاڑی: Hansie Cronje (SA)
  • Bucknor replaced Ian Robinson as an umpire in this match after protests by Pakistan.

1 مارچ
اسکور کارڈ
نیدرلینڈز 
216/9 (50 اوور)
بمقابلہ
 متحدہ عرب امارات
220/3 (44.2 اوور)
Peter Cantrell 47 (106)
Shaukat Dukanwala 5/29 (10 اوور)
Saleem Raza 84 (68)
Roland Lefebvre 1/24 (8 اوور)
United Arab Emirates won by 7 wickets
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
امپائر: Mahboob Shah اور Steve Randell
بہترین کھلاڑی: Shaukat Dukanwala (UAE)
  • This was the first ever official ODI between two ICC Associate teams.

3 مارچ
اسکور کارڈ
انگلستان 
249/9 (50 اوور)
بمقابلہ
 پاکستان
250/3 (47.4 اوور)
سعید انور 71 (72)
ڈومینک کارک 2/59 (10 اوور)
Pakistan won by 7 wickets
نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی
امپائر: B.C. Cooray اور سرینیوساگرنم ونکتتاراگھون
بہترین کھلاڑی: عامر سہیل (Pak)

5 مارچ
اسکور کارڈ
جنوبی افریقا 
328/3 (50 اوور)
بمقابلہ
 نیدرلینڈز
168/8 (50 اوور)
اینڈریو ہڈسن 161 (132)
Eric Gouka 1/32 (2 اوور)
Nolan Clarke 32 (46)
ایلن ڈونلڈ 2/21 (6 اوور)
South Africa won by 160 runs
راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی
امپائر: Khizer Hayat اور Steve Randell
بہترین کھلاڑی: اینڈریو ہڈسن (SA)

6 مارچ
اسکور کارڈ
پاکستان 
281/5 (50 اوور)
بمقابلہ
 نیوزی لینڈ
235 (47.3 اوور)
سعید انور 62 (67)
Robert Kennedy 1/32 (5 اوور)
سٹیفن فلیمنگ 42 (43)
Mushtaq Ahmed 2/32 (10 اوور)
Pakistan won by 46 runs
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
امپائر: K.T. Francis اور Ian Robinson
بہترین کھلاڑی: سلیم ملک (Pak)

حتمی مرحلہ[ترمیم]

 
کوائٹر فائنلسیمی فائنلفائنل
 
          
 
9 مارچ – اقبال اسٹیڈیم، Pakistan
 
 
 انگلستان235/8
 
13 مارچ – ایڈن گارڈنز، India
 
 سری لنکا236/5
 
 سری لنکا251/8
 
9 مارچ – Bangalore، India
 
 بھارت120/8
 
 بھارت287/8
 
17 مارچ – قذافی اسٹیڈیم، Pakistan
 
 پاکستان248/9
 
 سری لنکا245/3
 
11 مارچ – نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، Pakistan
 
 آسٹریلیا241/7
 
 ویسٹ انڈیز264/8
 
14 مارچ – Mohali، India
 
 جنوبی افریقا245
 
 ویسٹ انڈیز202
 
11 مارچ – Chennai، India
 
 آسٹریلیا207/8
 
 نیوزی لینڈ286/9
 
 
 آسٹریلیا289/4
 

کوائٹر فائنل[ترمیم]

9 مارچ
اسکور کارڈ
انگلستان 
235/8 (50 اوور)
بمقابلہ
 سری لنکا
236/5 (40.4 اوور)
سنتھ جے سوریا 82 (44)
ڈرمٹ ریو 1/14 (4 اوور)
Sri Lanka won by 5 wickets
اقبال اسٹیڈیم، فیصل آباد
Attendance: 25,000
امپائر: Mahboob Shah اور Ian Robinson
بہترین کھلاڑی: سنتھ جے سوریا (SL)

9 مارچ
اسکور کارڈ
بھارت 
287/8 (50 اوور)
بمقابلہ
 پاکستان
248/9 (49 اوور)
نوجوت سنگھ سدھو 93 (115)
Mushtaq Ahmed 2/56 (10 اوور)
عامر سہیل 55 (46)
Venkatesh Prasad 3/45 (10 اوور)
India won by 39 runs
ایم چناسوامی اسٹیڈیم، بنگلور
Attendance: 55,000
امپائر: Steve Bucknor اور David Shepherd
بہترین کھلاڑی: نوجوت سنگھ سدھو (Ind)

11 مارچ
اسکور کارڈ
ویسٹ انڈیز 
264/8 (50 اوور)
بمقابلہ
 جنوبی افریقا
245 (49.3 اوور)
براین لارا 111 (94)
Brian McMillan 2/37 (10 اوور)
Daryll Cullinan 69 (78)
Roger Harper 4/47 (10 اوور)
West Indies won by 19 runs
نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی
Attendance: 30,666
امپائر: K.T. Francis اور Steve Randell
بہترین کھلاڑی: براین لارا (WI)

11 مارچ
اسکور کارڈ
نیوزی لینڈ 
286/9 (50 اوور)
بمقابلہ
 آسٹریلیا
289/4 (47.5 اوور)
مارک واہ 110 (112)
نیتھن ایسٹل 1/21 (3 اوور)
Australia won by 6 wickets
ایم اے چدمبرم اسٹیڈیم، چینائی
Attendance: 48,273
امپائر: Cyril Mitchley اور سرینیوساگرنم ونکتتاراگھون
بہترین کھلاڑی: مارک واہ (Aus)

سیمی فائنل[ترمیم]

13 مارچ
اسکور کارڈ
سری لنکا 
251/8 (50 اوور)
بمقابلہ
 بھارت
120/8 (34.1 اوور)
Match awarded to Sri Lanka
ایڈن گارڈنز، کولکاتہ
Attendance: 110,000
امپائر: Steve Dunne اور Cyril Mitchley
بہترین کھلاڑی: اروندا ڈی سلوا (SL)

14 مارچ
اسکور کارڈ
آسٹریلیا 
207/8 (50 اوور)
بمقابلہ
 ویسٹ انڈیز
202 all out (49.3 اوور)

فائنل[ترمیم]

17 مارچ
اسکور کارڈ
آسٹریلیا 
241/7 (50 اوور)
بمقابلہ
 سری لنکا
245/3 (46.2 اوور)
Sri Lanka won by 7 wickets
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
Attendance: 62,645
امپائر: Steve Bucknor اور David Shepherd
بہترین کھلاڑی: اروندا ڈی سلوا (SL)

Sri Lanka won the toss اور chose to field. مارک ٹیلر (کرکٹ کھلاڑی) (74 from 83 balls, 8 fours, 1 six) اور رکی پونٹنگ (45 from 73 balls, 2 fours) shared a second-wicket partnership of 101 runs. When Ponting اور Taylor were dismissed, however, Australia fell from 1/137 to 5/170 as the famed 4-pronged spin attack of Sri Lanka took its toll. Despite the slump, Australia struggled on to 241 (7 wickets, 50 اوور)۔

شماریات[ترمیم]

سچن تندولکر، عالمی کپ کے دوران مین سب سے زیادہ دوریں بنانے والے
Anil Kumble, the leading wicket taker in the tournament.
زیادہ دوڑیں بنانے والے
دوڑیں کھلاڑی ملک
523 سچن تندولکر  بھارت
484 مارک واہ  آسٹریلیا
448 اروندا ڈی سلوا  سری لنکا
391 گیری کرسٹن  جنوبی افریقا
329 سعید انور  پاکستان
زیادہ ووکٹیں لینے والے
ووکٹیں کھلاڑی ملک
15 انیل کمبلے  بھارت
13 وقار یونس  پاکستان
12
پال سٹرانگ  زمبابوے
Roger Harper  ویسٹ انڈیز
ڈیمین فلیمنگ  آسٹریلیا
شین وارن  آسٹریلیا

سو دوڑیں بنانے والے[ترمیم]

شمار۔ نام دوڑیں گیندیں 4 6 ایس/آر ٹیم مخالف میدانe تاریخ ایک روزہ #۔
1. نیتھن ایسٹل 101 132 8 2 76.51  نیوزی لینڈ  انگلستان احمد آباد 14 فروری 1996ء 1048
2.[2] گیری کرسٹن 188* 159 13 4 118.23  جنوبی افریقا  متحدہ عرب امارات راولپنڈی 16 فروری 1996ء 1049
3. سچن تندولکر 127* 138 15 1 92.02  بھارت  کینیا باراباتی اسٹیڈیم 18 فروری 1996ء 1052
4. گریم ہک 104* 133 6 2 78.19  انگلستان  نیدرلینڈز پشاور 22 فروری 1996ء 1057
5. مارک واہ 130 128 14 1 101.56  آسٹریلیا  کینیا وشاکھاپٹنم 23 فروری 1996ء 1058
6. مارک واہ 126 135 8 3 93.33  آسٹریلیا  بھارت وانکھیڈے اسٹیڈیم 27 فروری 1996ء 1065
7. عامر سہیل 111 139 8 0 79.85  پاکستان  جنوبی افریقا نیشنل اسٹیڈیم، کراچی 29 فروری 1996ء 1067
8. سچن تندولکر 137 137 8 5 100.00  بھارت  سری لنکا FSK, Delhi 2 مارچ 1996ء 1070
9. رکی پونٹنگ 102 112 5 1 91.07  آسٹریلیا  ویسٹ انڈیز جے پور 4 مارچ 1996ء 1072
10. اینڈریو ہڈسن 161 132 13 4 121.96  جنوبی افریقا  نیدرلینڈز راولپنڈی 5 مارچ 1996ء 1073
11. اروندا ڈی سلوا 145 115 14 5 126.08  سری لنکا  کینیا کینڈی 6 مارچ 1996ء 1074
12. ونود کامبلی 106 110 11 0 96.36  بھارت  زمبابوے گرین پارک اسٹیڈیم 6 مارچ 1996ء 1075
13. براین لارا 111 94 16 0 118.08  ویسٹ انڈیز  جنوبی افریقا نیشنل اسٹیڈیم، کراچی 11 مارچ 1996ء 1079
14. کرس ہیرس 130 124 13 4 104.83  نیوزی لینڈ  آسٹریلیا چینائی 11 مارچ 1996ء 1080
15. مارک واہ 110 112 6 2 98.21  آسٹریلیا  نیوزی لینڈ چینائی 11 مارچ 1996ء 1080
16. اروندا ڈی سلوا 107* 124 13 0 86.29  سری لنکا  آسٹریلیا قذافی اسٹیڈیم 17 مارچ 1996ء 1083

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Records / One-Day Internationals / Team records / Highest innings totals – ESPNcricinfo. اخذکردہ بتاریخ 3 مارچ 2015.
  2. This is the highest individual score in World Cup till date

بیرونی روابط[ترمیم]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]