کوسماس یروشلمی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
مقدس کوسماس یروشلمی
Kosma-ierusalimskij.jpg
القدسی
پیدائش آٹھویں صدی
یروشلم
وفات آٹھویں صدی
مایوما، غزہ
محترم در مشرقی راسخ الاعتقاد کلیسیا،
مشرقی کیتھولک کلیسیا
تہوار 14 اکتوبر
منسوب خصوصیات اسقف و راہب کے کپڑوں میں ملبوس، مناجات کے متن والا طومار
سرپرستی مناجات نگار

کوسماس یروشلمی مشرقی راسخ الاعتقاد کلیسیا کے ایک اسقف اور مناجات نگار تھے۔ کوسماس کی جائے پیدائش کے متعلق کچھ ماخذ میں یروشلم ملتا ہے جبکہ کچھ میں دمشق ہے۔ کوسماس بچپن ہی میں یتیم ہو گئے تو یوحنا دمشقی کے والد سرجون (سرجیس) نے اُن کو گود لے لیا، تو اس لحاظ سے کوسماس یوحنا دمشقی کے رضاعی بھائی بن گئے۔ یوحنا دمشقی اور کوسماس یروشلمی کو ایک راہب کوسماس (الگ شخصیت) نامی شخص نے تعلیم دی تھی۔ راہب کوسماس کو یوحنا کے والد نے غلامی سے آزادی دلائی تھی۔۔[1] کوسماس یروشلمی اور اُس کا رضاعی بھائی یوحنا دیر مار سابا (خانقاہ) میں راہب بننے کے لیے دمشق سے یروشلم چلے گئے۔[2] اُن دونوں بھائیوں نے یکجا ہوکر تمثال شکنی کی بدعت کے خلاف کلیسیا کا دفاع کیا۔ کوسماس یروشلمی کو جب غزہ کے ایک قصبے ”مایوما“ میں اسقف بنایا گیا تو وہ 743ء میں خانقاہ دیر مار سابا چھوڑ کر اپنے اختیارات سنبھالنے کے لیے مایوما روانہ ہو گئے۔[2] انہوں نے یوحنا دمشقی سے زیادہ عمر پائی اور کافی بڑی عمر میں وفات پاگئے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Anton Baumstark۔ "Cosmas"۔ The Catholic Encyclopedia۔ New Advent۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 9 اپریل 2011۔
  2. ^ ا ب Byzantine Music and Liturgy، E. Wellesz, The Cambridge Medieval History: The Byzantine Empire, Part II، Vol. IV, ed. J.M. Hussey, D.M. Nicol and G. Cowan, (Cambridge University Press, 1967)، 149.