کونراڈ سنگما

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
کونراڈ سنگما
Conrad-Sangma .png 

مناصب
رکن سولہویں لوک سبھا[1]   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
رکن سنہ
19 مئی 2016 
پارلیمانی مدت سولہویں لوک سبھا 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png پی اے سنگما 
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
وزیر اعلیٰ میگھالیہ (12 )   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منصب (P39) ویکی ڈیٹا پر
آغاز منصب
6 مارچ 2018 
Fleche-defaut-droite-gris-32.png مکل سنگما 
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png
معلومات شخصیت
پیدائش 27 جنوری 1977 (42 سال)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
تورا، میگھالیہ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of India.svg بھارت  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
جماعت نیشنل پیپلز پارٹی (بھارت)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
والد پی اے سنگما  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں والد (P22) ویکی ڈیٹا پر
بہن/بھائی
جیمس سنگما،  اگاتھا سنگما  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں بہن/بھائی (P3373) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر

کونراڈ کونگکل سنگما ایک بھارتی سیاست دان جو میگھالیہ کی ریاست کے بارہویں اور موجودہ وزیر اعلیٰ ہیں۔[2] انہوں نے اپنے والد اور سابق وزیر اعلیٰ پورنو سنگما کی وفات کے بعد سنہ 2016ء میں نیشنل پیپلز پارٹی (این پی پی) کی صدارت سنبھالی۔ وہ لوک سبھا حلقے تورا سے پارلیمان کے رکن (2016ء - 2018ء) بھی تھے۔[3]

کونراڈ میگھالیہ کی آٹھویں قانون ساز اسمبلی[4] میں این پی پی کی حلقہ سیلسیلا سے نمائندگی کر رہے تھے اور سابق قائد حزب اختلاف بھی تھے۔[5] پہلے سنہ 2008ء میں کونراڈ سنگما میگھالیہ کے نوجوان ترین وزیر خزانہ بنے تھے۔

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

کونراڈ سنگما 27 جنوری 1978ء کو مغربی گارو ہلز ضلع کے ایک قصبے تورا میں پیدا ہوئے تھے۔[6] ان کے والد آنجہانی پورنو سنگما میگھالیہ کے سابق وزیر اعلیٰ اور لوک سبھا کے اسپیکر تھے اور والدہ سورادنٰی گھریلو خاتون۔[7] ان کے بڑے بھائی جیمس اور چھوٹی بہن اگاتھا این پی ہی کے سیاست دان ہیں، ایک دوسری بہن کرسٹی بھی ہے،[8] جو سیاست سے بالکل دور رہتی ہے۔[9] کونراڈ دہلی میں بڑے ہوئے اور وہاں سینٹ کولمبا اسکول سے پڑھے تھے۔ انہوں نے وارٹن اسکول آف دی یونیورسٹی آف پنسلوانیا سے entrepreneurial management میں بی بی اے کی ڈگری حاصل کی اور اس کے بعد ایمپریل کالج لندن سے مالیات میں ایم بی اے کیا۔[3][10]

نجی زندگی[ترمیم]

کونراڈ سنگما نے 29 مئی 2009ء کو ایک پیشہ ور ڈاکٹر مہتاب چنڈی سے شادی کی تھی،[11] ان کی دو بیٹیاں ہیں: امارا (پیدائش 2011ء) اور ایک دوسری (پیدائش 2017ء)۔[12][13]

سماجی کام[ترمیم]

سیاست کے علاوہ کونراڈ سماجی کاموں میں بھی حصہ لیتے ہیں۔ وہ پی اے سنگما فاؤنڈیشن کے صدر ہیں، اس ادارے کا مقصد تعلیم و ماحول کی بہتری کرنا ہے۔ یہ ادارہ میگھالیہ کے دیہی علاقوں میں چار کالج بھی چلا رہا ہے۔ وہ اس وقت میگھالیہ کرکٹ ایسوسی ایشن اور اسپورٹس اکیڈمی کے صدر بھی ہیں۔[14]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. http://164.100.47.194/Loksabha/Members/AlphabeticalList.aspx — اخذ شدہ بتاریخ: 23 جولا‎ئی 2018
  2. "Congress outsmarted in Meghalaya, Conrad Sangma to be sworn in March 6"۔ دی ہندو۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔
  3. ^ ا ب "Conrad delivers quickie budget"۔ دی ٹیلی گراف۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  4. "Leader Of Opposition"۔ میگھالیہ کی قانون ساز اسمبلی۔
  5. "List Of Members Of The Eight Meghalaya Legislative Assembly"۔ میگھالیہ کی قانون ساز اسمبلی۔ مورخہ 2011-05-11 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  6. "Conrad Sangma is the new Chief Minister of Meghalaya"۔ دی نارتھ ایسٹ ٹوڈے۔ مورخہ 5 مارچ 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔
  7. "Conrad Sangma"۔ پنسلوانیا یونیورسٹی۔ stwing.upenn.edu۔ مورخہ 19 جنوری 1999 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔
  8. "Agatha, Pala to be sworn in today"۔ شیلونگ ٹائمز۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔
  9. "My daughters named after Agatha Christie: Sangma"۔ ریڈف۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔
  10. "Meghalaya polls: No BJP or Cong, NPP aims for sole sway"۔ دی ٹائمز آف انڈا۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔
  11. نشیت ڈوھلابھائی۔ "Children set stage for thaw"۔ دی ٹیلی گراف۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔
  12. Saidul Khan۔ "Battle of Sangmas sealed in ballot box"۔ دی ٹیلی گراف۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔
  13. "Conrad's Mantra: People, Principles And Participation To Be Guiding Force"۔ شیلونگ ٹائمز۔ مورخہ 5 مارچ 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔
  14. "Meet Conrad Sangma: PA Sangma's son and next CM of Meghalaya"۔ دی فنانشیل ایکسپریس۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 مارچ 2018۔