کچھ کچھ ہوتا ہے

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
کچھ کچھ ہوتا ہے
Kuch Kuch Hota Hai DVD Cover.jpg
ہدایت کار کرن جوہر
پروڈیوسر یش راج
تحریر کرن جوہر
ستارے شاہ رخ خان، کاجول دیوگن، سلمان خان، رانی مکھرجی
موسیقی جتن للت
سنیماگرافی سنتوش
ایڈیٹر سنجے
تاریخ اشاعت
13 اکتوبر, 1998
دورانیہ
185 دقیقہ
ملک بھارت
زبان ہندی
بجٹ 8.33 کروڑ
باکس آفس 103.38 کروڑ

کچھ کچھ ہوتا ہے 1998ء میں بنائی گئی ایک بھارتی فلم ہے۔ اس فلم کے ذریعے کرن جوہر نے اپنے ہدایت کاری کیریئر کی شروعات کی اور شاہ رخ اور کاجول کی کامیاب جوڑی کو ایک بار پھر ناظرین کے سامنے پیش کیا۔ طویل عرصے سے ایک ہٹ کی تلاش میں چل رہے یش جوہر بینر کو اور كھنڈالا گرل رانی مکھرجی کو اس فلم سے بہت اميدیں تھیں۔ دوست آدتيا چوپڑا کی طرح کرن جوہر نے بھی کیریئر کا آغاز ایک داستانِ محبت سے کیا ۔ اس فلم میں رانی مکھرجی اور سلمان خان نے مہمان اداکار کے طور پر کام کیا ۔

فلم کے قصے کا خلاصہ[ترمیم]

راہل (شاہ رخ خان) اور انجلی (کاجول دیوگن) ایک ہی کالج میں پڑھتے ہیں۔ راہل ایک خوشدل اور مستمولا لڑکا ہوتا ہے اور انجلی ایک لڑکوں جیسی لگنے والی اور انہی کے جیسے شوق رکھنے والی لڑکی ہوتی ہے۔ انجلی اور راہل دونوں بہت اچھے دوست ہوتے ہیں اور پورے کالج کی جان ہوتے ہیں۔ جہاں راہل کالج کی لڑکیوں کے پیچھے بھاگتا ہے وہیں انجلی کو راہل کی اس طرح کی حرکتیں بے حد ناپسند ہوتی ہے۔ پر راہل کو اپنے ہی کالج میں آکسفورڈ سے پڑھنے آئی پرنسپل کی بیٹی ٹینا ( رانی مکھرجی ) سے پیار ہو جاتا ہے۔ راہل کو ٹینا کے ساتھ دیکھ کر اں جلی کو جلن ہونے لگتی ہے اور تب اسے احساس ہوتا ہے کہ انجلی کی راہل سے دوستی، دوستی نہیں پیار ہے۔ ٹینا بھی راہل سے پیار کرنے لگتی ہے لیکن اسی درمیان وہ انجلی کو دیکھ کر واقف ہو جاتی ہے کہ وہ بھی راہل سے پیار کرتی ہے۔ یہاں کہانی میں محبت سہ گوشہ بنتی ہے لیکن راہل اور ٹینا کے لیے انجلی کالج چھوڑ کر جاتی ہے ۔ راہل اور ٹینا شادی کر لیتے ہیں اور ان کی ایک بیٹی ہوتی ہے جس کا نام وہ انجلی رکھتے ہیں۔ ٹینا مرنے سے پہلے اپنے بیٹی کے لیے اس کے ہر سالگرہ پر ایک خط تحفے میں چھوڑ کر جاتی ہے۔ اس کی خط میں، راہل اور اں جلی کے کالج کی داستان بیان ہوتی ہے۔ اں جلی کو 8 سال کی ہونے پر پتہ لگتا ہے کہ کالج میں اں جلی (کاجول دیوگن) اس کے پاپا سے کتنا پیار کرتی تھی اور اس کی مرتی ہوئی ماں کا ایک ہی خواب تھا - راہل اور انجلی کو پھر سے ملنا۔ وہ قسم کھاتی ہے کی وہ اپنے پاپا کو اں جلی سے ملائےگی اور وہ اں جلی کی تلاش شروع کر دیتی ہے۔ اسے انجلی تو مل جاتی ہے لیکن تب تک اں جلی کی منگنی امن (سلمان خان) سے ہوتی ہے ۔

کیا چھوٹی اں جلی اپنے پاپا کو ان کی پرانی کالج والی دوست سے ملا پاتی ہے اور منگنی ہونے کے بعد بھی کیا انجلی اور راہل مل لیتے ہیں یہ فلم کا عروج ہے ۔ فلم تفریح بخش ہے لیکن کئی جگہ پر کہانی کو کاٹ کر چھوٹا کیا جا سکتا ہے۔ مہیش ملہوترا نے فنکاروں کے لیے بہت اچھے کپڑے ڈیزائن کیے ہیں اور فلم کے فوٹوگرافی، کی جتنی تعریف کی جائے کم ہے۔ کرن جوہر نے اپنی پہلی فلم میں اچھی ہدایت کاری کی ہے۔ شاہ رخ خان ہمیشہ کی طرح اداکاری میں سب سے اوپر رہے ہیں اور یہ فلم بھی ان کی سب سے کامیاب ترین فلموں میں سے ایک شمار ہوتی ہے۔ ثنا سعید نے چھوٹی اں جلی کا کردار بہترین طریقے سے ادا کیا ہے۔ رانی مکھرجی کا کردار چھوٹا ہے پر بازی ماری کاجول دیوگن نے۔ ناظرین کو شاہ رخ خان اور کاجول دیوگن کی جوڑی بہت پسند آیا اور یہی جوڑی اس فلم کی جان ہے۔ پردے پر کافی وقت بعد شاہ رخ خان اور سلمان خان کو ساتھ دیکھنا اچھا لگا۔ جتن للت نے بہترین موسیقی سے اس فلم کو رونق بخشی ہے اور فلم کے گیت طویل عرصے تک سامعین کی زبان پر راج کریں گے۔ مجموعی طور پر یہ فلم اچھی اور تفریح بخش ہے اور بیرونی ممالک میں اسے بہت پسند کیا گیا ہے۔

گیت[ترمیم]

گانوں کی فہرست
نمبر شمارعنوانگلوکارطوالت
1."کچھ کچھ ہوتا ہے"اُدت نرائن، الکا یاگنک 
2."کوئی مل گیا"اُدت نرائن، الکا یاگنک اور کویتا کرشن مورتی 
3."ساجن جی گھر آئے"کمار سانو ، الکا یاگنک اور کویتا کرشن مورتی 
4."کچھ کچھ ہوتا ہے (غمزدہ)"الکا یاگنک 
5."یہ لڑکی ہے دیوانی"اُدت نرائن، الکا یاگنک 
6."تجھے یاد نہ میری آئی"اُدت نرائن، الکا یاگنک 
7."رگھوپتی راگھو"شنکر مہادیون اور ہمسرا 
8."لڑکی بڑی انجانی ہے"کمار سانو ، الکا یاگنک