مندرجات کا رخ کریں

کیرن سمتھیز

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
کیرن سمتھیز
OBE
ذاتی معلومات
مکمل نامکیرن سمتھیز
پیدائش (1969-03-20) 20 مارچ 1969 (عمر 55 برس)
ایشبی-ڈی-لا-زؤچ، لیسٹرشائر، انگلینڈ
بلے بازیبائیں ہاتھ کی بلے باز
گیند بازیدائیں ہاتھ کی میڈیم پیس گیند باز
حیثیتآل راؤنڈر
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 107)21 اگست 1987  بمقابلہ  آسٹریلیا
آخری ٹیسٹ15 جولائی 1999  بمقابلہ  بھارت
پہلا ایک روزہ (کیپ 43)26 جولائی 1986  بمقابلہ  بھارت
آخری ایک روزہ15 فروری 2000  بمقابلہ  نیوزی لینڈ
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
1985–1999ایسٹ مڈلینڈز
2000ناٹنگھم شائر
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ فرسٹ کلاس لسٹ اے
میچ 15 69 17 154
رنز بنائے 443 921 536 2,930
بیٹنگ اوسط 22.15 23.61 23.30 30.84
100s/50s 0/3 1/1 0/4 1/14
ٹاپ اسکور 64 110* 64 110*
گیندیں کرائیں 2,196 2,681 2,527 6,644
وکٹ 16 64 20 177
بالنگ اوسط 45.56 18.65 41.10 15.37
اننگز میں 5 وکٹ 0 0 0 1
میچ میں 10 وکٹ 0 0 0 0
بہترین بولنگ 3/63 3/6 3/63 6/15
کیچ/سٹمپ 11/– 21/– 12/– 43/1
ماخذ: CricketArchive، 21 فروری 2021ء

کیرن سمتھیز OBE (پیدائش: 20 مارچ 1969ء) انگلستان کی ایک خاتون کرکٹ کھلاڑی ہیں جو بائیں ہاتھ کی بلے باز اور دائیں ہاتھ سے درمیانے بالر کے طور پر کھیلتی تھی۔ وہ 1986ء اور 2000ء کے درمیان 15 ٹیسٹ میچوں اور 69 ایک روزہ بین الاقوامی مقابلوں میں نظر آئیں اور 1993ء سے 2000ء کے درمیان انگلینڈ کی کپتان رہیں [1] 1993ء میں اس نے انگلینڈ کو ان کا دوسرا ورلڈ کپ ٹائٹل دلایا اور وہ اس ٹورنامنٹ میں مشترکہ طور پر وکٹیں لینے والی کھلاڑی تھیں۔ [2] اس نے ایسٹ مڈلینڈز اور ناٹنگھم شائر کے لیے ڈومیسٹک کرکٹ کھیلی۔ [3] [4] اپنے کھیل کے کیریئر کے بعد، سمتھیز نے جنوبی افریقہ میں کام کیا، اپنے گھریلو مقابلوں میں ٹیموں کا انتظام کیا۔ [5]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Karen Smithies ODI Matches"۔ CricketArchive۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 فروری 2021 
  2. "Women's World Cup 1993/Bowling by Wickets"۔ CricketArchive۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 فروری 2021 
  3. "Player Profile: Karen Smithies"۔ CricketArchive۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 فروری 2021 
  4. "Player Profile: Karen Smithies"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 فروری 2021 
  5. "Former England captain Karen Smithies sues CSA for alleged discrimination"۔ ESPN Cricinfo۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 مارچ 2021