گردوارہ کارتے پروان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
گردوارہ کارتے پروان
Karte Parwan Sahib
(پنجابی: ਕਰਤੇ ਪਰਵਾਨ ਸਾਹਿਬ)‏
پشتو: کارته پروان صاحب
Kabul Gurdwara Karte Parwan IMG 0623.JPG
بنیادی معلومات
متناسقات34°32′N 69°08′E / 34.53°N 69.13°E / 34.53; 69.13
مذہبی انتسابسکھ مت
صوبہصوبہ کابل
ملکFlag of the Taliban.svg افغانستان
مذہبی یا تنظیمی حالتفعال
نوعیتِ تعمیرسکھ طرز تعمیر

گردوارہ کارتے پروان (انگریزی: Gurdwara Karte Parwan) کابل، افغانستان کے علاقے کارتے پروان کے اہم گوردواروں میں سے ایک ہے۔ گردوارہ کا مطلب گرو کا دروازہ ہے، اور سکھوں کے لیے عبادت گاہ ہے۔

1978ء کے شمسی انقلاب اور افغانستان میں سوویت جنگ سے پہلے ہزاروں سکھ کابل میں رہتے تھے۔ ان میں سے بہت سے لوگ 1980ء اور 1990ء کی دہائیوں میں افغان مہاجرین کے طور پر ہندوستان اور پڑوسی پاکستان میں بھاگ گئے۔ [1][2][3] 2001ء کے آخر میں امریکی حملے کے بعد، کچھ نے واپسی کا فیصلہ کیا۔ 2008ء تک افغانستان میں 2500 سکھ تھے۔ [4]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Magnier، Mark؛ Baktash، Hashmat (25 جولائی 2013). "No home for Afghanistan Sikhs". GulfNews.com. اخذ شدہ بتاریخ 27 دسمبر 2015. 
  2. "Afghanistan's Sikhs feel alienated, pressured to leave: Neighbours, News". India Today. 10 جون 2015. اخذ شدہ بتاریخ 27 دسمبر 2015. 
  3. Sengupta، Pallavi (12 جون 2015). "Afghan-Sikhs count their days in Afghanistan". www.oneindia.com. اخذ شدہ بتاریخ 27 دسمبر 2015. 
  4. AP (10 جون 2015). "Afghanistan's Sikhs feel alienated, pressured to leave". The Hindu. اخذ شدہ بتاریخ 27 دسمبر 2015.