گودھرا برادری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

}}

گودھرا کمیونٹی کی تاریخ اتنی ہی پرانی ہے جتنی برصغیر کی۔ ہندوستان کے ایک صوبہ گجرات میں ایک چھوٹا سا قصبہ جو آج ایک بڑے شہر کی تصویر بن گیا ہے اور اسی کے جنوب میں آباد ایک قصبہ ویجلپور جہاں پر مسلمانوں کی آبادی تقریبا دس ہزار کے قریب ہے۔ گودھرا کمیونٹی کی مادری زبان گجراتی ہے۔ 1947ء میں تقسیم ہندوستان کے وقت وہاں کے لاکھوں مسلمانوں کی طرح گودھرا کمیونٹی کے لوگوں نے بھی ہجرت کی۔ اور کھوکھرا پار کے راستے پاکستان میں داخل ہوکر سندھ کے مختلف دیہاتوں اور قصبوں میں آباد ہوئے جن میں مثلا شکارپور، میرپور، ٹنڈوآدم اور باڈرا وغیرہ قابل ذکر ہیں۔ کچھ لوگ حیدرآباد اور کوٹری میں بھی آباد ہوئے۔ تاہم گودھرا کمیونٹی کی اکثریتی آبادی پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں آباد ہوئی۔ ان کا سب سب سے بڑا مرکز گودھرا کالونی ہے۔ جو ضلع وسطی کے ٹاؤن نیوکراچی میں آباد ہے۔ سیکٹر 11۔ جی، سیکٹر 11۔ ایف، سیکٹر 11۔ ای اور سیکٹر 11۔ ڈی میں گودھرا کمیونٹی کے کم و بیش اسی ہزار لوگ آباد ہیں۔ سیکٹر 11۔ جی میں ان کی اکثریت کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ بلدیاتی الیکشن، صوبائی الیکشن اور قومی الیکشن میں ان کا پلڑا بھاری رہتا ہے۔ اس کے علاوہ گودھرا کمیونٹی کراچی کے مختلف علاقوں میں آباد ہے۔ مثلا واٹر پمپ، جونامارکیٹ، رنچھوڑ لاءن، گارڈن اور کورنگی نمبر 1 sابريا—اس علاقے میں ايك برادري اور بهي أبادہے جو مير عالم كے نام سے جانی جاتی ہے اور جس کے رواج دستور قوانين سب كچھ دنيا سے مختلف ہے جو كماتی سب شادي بياه پر لگادیتی ہے ہے وغیرہ میں قابل ذکر ہیں۔ گودھرا کمیونٹی بڑی منظم ہے۔ اور ان کی اپنی علاقوں میں انجمنیں اس سلسلے میں برادری میں رہتے ہوئے اپنا بھرپور کردار ادا کر رہی ہیں۔ انہیں میں گودھرا کمیونٹی کے سب سے بڑے علاقہ سیکٹر 11۔ جی نیوکراچی گودھرا کالونی کا کردار بقیہ تمام دوسری جگہ پر رہنے والوں سے زیادہ قابل ذکر ہے۔ یہاں کی انجمن گودھرا شیخ مسلم انجمن کے نام سے پہچانی جاتی ہے۔ اس انجمن کے ہر دو سال بعد باءی بیلٹ الیکشن ہوتے ہیں۔ یہ سیکٹر 11- G کی گودھرا برادری کا المیہ رہا ہے کہ یہاں کی انجمن میں جو کوئی بھی الیکشن کے ذریعہ منتخب ہو کر آتا ہے وہ یہاں سے جانا نہیں چاہتا- ابھی بھی سال 2013-2015کی مدت کے لیے منتخب ہونے والے صدر جناب یوسف کھرادی صاحب جن کی مدت اکتوبر 2015 میں ختم ہو گئی تھی لیکن پھر بھی وہ صدارت کی کرسی پر براجمان ہیں- اور یہ صورت حال ہر منتخب ہونے والے صدر کے دور میں رہی ہے- سابق صدرشیخ فیروز کولیا کے دور سے لے کر سابق صدر حاجی اقبال سپٹا تک یہ صورت حال رہی۔

اس انجمن کے تحت برادری کی صحت کے لیے ایک بہت بڑا ہسپتال گودھرا میڈیکل سینٹر کے نام سے کام کر رہا ہے۔ یہاں پر روزانہ ہزاروں کی تعداد میں کمیونٹی کے لوگوں کے علاوہ دوسرے لوگ بھی اپنا علاج کروانے کے لیے آتے ہیں۔ اس ہسپتال میں ہر اس علاج کی سہولیات فراہم کی گئیں ہیں جو بڑے ہسپتالوں میں ہوتی ہیں۔ یہاں تک کہ اس ہسپتال کو نئی کراچی کا آغا خان ہسپتال کہا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ انجمن نے حال ہی میں کمیونٹی ہال کا بھی افتتاح کیا ہے جہاں پر کمیونٹی کے لوگ ارزاں قیمت پر اپنے پروگرام کا اہتمام کرواسکتے ہیں۔ اسی طرح گودھرا برادری کے ہونہار بچوں کے لیے ایک خوبصورت بلڈنگ تعمیر کی گئی ہے۔ جس میں برادری کے بچے اپنی تعلیم حاصل کریں گے۔