گوری مندر نگرپارکر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
گوری مندر
(سندھی: گوري مندر)
گوری مندر
Gori Temple Nagarparkar
گوری مندر نگرپارکر is located in سندھ
گوری مندر نگرپارکر
Shown within سندھ
بنیادی معلومات
مقام نگر پارکر
متناسقات 24°38′02″N 70°36′34″E / 24.63389°N 70.60944°E / 24.63389; 70.60944متناسقات: 24°38′02″N 70°36′34″E / 24.63389°N 70.60944°E / 24.63389; 70.60944
مذہبی انتساب جین مت
معبود پرشوناتھ
ضلع ضلع تھرپارکر
ریاست سندھ
ملک پاکستان Flag of پاکستان
تاریخ تاسیس 300 A.D

گوری مندر (المعروف گوری جو مندر یعنی گوری کا مندر) نگر پارکر میں واقع ایک جین مندر ہے۔[1] یہ ویرواہ مندر سے میں 14 میل شمال مغرب میں واقع ہے۔[2] یہ 1375-1376 عیسوی میں تعمیر گیا تھا۔ مندر خصوصی طور پر 23ویں جین ترتھانکر بھگوان پارشوناتھ کے لیے مختص کیا گیا تھا۔[3]

اشتقاقیات[ترمیم]

ہر صدیوں کے دوران اس مندر کا نام کئی بار تبدیل ہوا۔ یہ 300عیسوی میں ایک جین پرستار گوریچھوم کی طرف سے تعمیر کرایا گیا تھا[4] یا 16ویں صدی میں۔[5]

طرز تعمیر[ترمیم]

گوری مندر میں ماونٹ ابو، راجستھان بھارت کے لوگوں کے طرز پر تعمیر ہے ۔[6] یہ مندر 125فٹ ضرب 60 فٹ ہے اور سنگ مرمر سے بنایا ہوا ہے۔ پورے مندر کو ایک اونچے اسٹیج پر تعمیر کیا گیا ہے جو پتھروں میں کھودنے والی ایک سلسلہ کی طرف سے پہنچ گئی ہے۔ مندر کے اندرون کی خصوصیات جین مذہب کی تصورات سے سجی ہوئی ہیں جو شمال بھارت کے جین مندروں میں کسی بھی دوسری تام جھام سے پرانی ہے ۔ یہ گھوماو دار پایے میں بنایا گیا ہے اور مندر کے داخل باب کو جین مذہبی کہانیوں کے بیان کرنے والی پینٹنگ سے سجایا گیا ہے ۔ گوری جو (گوری مندر) میں تصویر ہیں۔ مندر میں 24 چھوٹے چھوٹے خانہ ہیں جو جینی تیرتھانکروں کے آرام کے لیے استعمال کیا جاتا سکتا ہوگا۔[7]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Ema Anis (2016-02-19)۔ "Secrets of Thar: A Jain temple, a mosque and a 'magical' well"۔ DAWN.COM (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-21۔
  2. "Gori Temple, Tharparkar"۔ heritage.eftsindh.com۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-21۔
  3. "Gori jo Mandar: Desert rose"۔ The Express Tribune (انگریزی زبان میں)۔ 2011-02-02۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-21۔
  4. "A glimpse into the many sights, sounds and colours of Hindu temples in Thar"۔ www.thenews.com.pk (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-21۔
  5. "Despite past grandeur, temple of Gori stands abandoned in Tharparkar"۔ The Express Tribune (انگریزی زبان میں)۔ 2016-02-10۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-21۔
  6. "Despite past grandeur, temple of Gori stands abandoned in Tharparkar"۔ The Express Tribune (انگریزی زبان میں)۔ 2016-02-10۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-21۔
  7. UNESCO World Heritage Centre۔ "Nagarparkar Cultural Landscape"۔ UNESCO World Heritage Centre (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-12-21۔