گڑھیمائی تہوار

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
گڑھیمائی تہوار
गढ़िमाई पर्व
Gadhimai.jpg
گڑھیمائی تہوار کے دوران میں جانوروں کو قربانی کے لیے لایا جارہاہے
حیثیت متحرک
قسم تہوار
شروع 28 نومبر 2014
تکرار ہر پانچ سال بعد
میدان باریاپور
مقام ضلع بارا،نیپال
حالیہ 28 نومبر 2014 (2014-11-28)
گزشتہ 2009
آگے 2019
حاضری 2 ملین لوگ
رقبہ 3-5 کیلومٹر گڑھیمائی مندر کے اردگرد

گڑھیمائی تہوار ایک تہوار ہے جو بعض ہندو پانچ سال بعد گڑھیمائی مندر کے مقام پر مناتے ہیں۔ اس تہوار میں ہزاروں کے تعداد میں معصوم جانوروں کی قربانی دی جاتی ہے۔

پس منظر[ترمیم]

تقریباً 2 ملین لوگ اس تہوار میں شرکت کرتے ہیں جن میں تقریباً 80 فیصد لوگ بھارت سے اس تہوار میں حصہ لینے کے لیے مختلف ریاستوں جیسے بہار اور اتر پردیش سے آتے ہیں۔[1] قربانی کرنے والے لوگوں کا ماننا ہے کہ اس قربانی سے ان کے دیوی گڑھیما خوش ہوکر ان کو برے روحوں سے بچاتی ہے اور خوشی دیتی ہے۔

اس تہوار کا آغاز نومبر کے پہلے ہفتے ہوتا ہے اور دسمبر کے پہلے ہفتے میں ختم ہوتا ہے۔ اس میں مختلف جانوروں جیسے کبوتر،بطخ،سوائن،بھینس،وغیرہ کی قربانی دی جاتی ہے۔2009 میں اس رسم کے آڑ میں 20 ہزار صرف بھینسوں کو ذبح کیا گیا۔ ایک اندازے کے مطابق اس رسم میں 2009 میں تقریباً 2 لاکھ 50 ہزار جانور ذبح کیے گئے۔[2][3]

اعتراضات[ترمیم]

اس تہوار پر جانوروں کے حقوق کے تنظیموں اور نیپال کے پہاڑی علاقوں کے کہیں ہندوؤں نے سخت اعتراض کرتے ہوئے کہیں مرتبہ سخت احتجاج کیا ہے کہ اس قتل عام کو روکا جائے جس سے ہزاروں بے گناہ جانوروں کو موت کے گھاٹ اتارا جاتا ہے، یوں جانوروں کے حقوق پامال ہوتے ہیں ۔[4][5] اس کے علاوہ کہیں سماجی کارکنان نے نیپالی حکومت کو خطوط بھی لکھے ہیں کہ وہ اس رسم کو روک دے۔[6][7] اس کے علاوہ مسلمانوں نے بھی اس بات کی سخت مخالفت کی ہے اور کہیں لوگوں نے نیپال میں 2015 میں آنے والا زلزلہ اسی فعل کا جوابی عذاب قرار دیا ہے کیونکہ اس زلزلے کے چھ مہینے پہلے گڑھیمائی رسم میں لاکھ سے زائد جانور ذبح کیے گئے۔[8]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Sudeshna Sarkar (24 نومبر 2009)۔ "Indians throng Nepal's Gadhimai fair for animal sacrifice"۔ The Times of India۔ اخذ شدہ بتاریخ 24 نومبر 2009۔
  2. "Over 20,000 buffaloes slaughtered in Gadhimai festival"۔ NepalNews.com۔ 25 نومبر 2009۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔
  3. Olivia Lang (24 نومبر 2009)۔ "Hindu sacrifice of 250,000 animals begins"۔ The Guardian۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 6 دسمبر 2014۔
  4. Pramada Shah (24 نومبر 2010)۔ "Never Again"۔ The Kathmandu Post۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 مارچ 2012۔
  5. "Gadhimai Festival:Why it must never happen Again"۔ Think Differently۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 18 مارچ 2012۔
  6. "Bardot appeal over animal slaughter at Nepal festival"۔ BBC۔ 20 نومبر 2009۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔
  7. Anil Bhanot (25 نومبر 2009)۔ "The Gadhimai sacrifice is grotesque"۔ The Guardian۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔
  8. Welcome newsofpakistan.com – BlueHost.com