ھو (تصوف)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
Isma allah zat-new.png

یَاھُو اسم ذاتِ باری تعالیٰ ہے۔ اہل تحقیق نے اسم اعظم کہا ہے اور یہ خاص ترین اسم ہے اسمائے باری تعالیٰ سے۔ اور اسمائے حسنی میں سب سے پہلے واقع ہوا ہے۔ اکثر اکابرین بزرگ نے خواص اسم اللہ تعالیٰ قرات و مداومت میں ابتدا باسم ھُُو کیا ہے۔ کیونکہ کلام مجید و فرقان حمید میں واقع ہوا ہے۔

ھُوَ اللّٰہُ الَّذِیْ لَآاِلٰہَ اِلَّا ھُوَ۔ عَالِمُ الْغَیْبِ وَالشَّہَادَۃَِ ۔ ھُوَالرَّحْمٰنُ الرَّحِیْمُ (22)

ھُوَاللّٰہُ الَّذِیْ لَآ اِلٰہَ اِلَّاھُوَ۔ اَلْمَلِکُ الْقُدُّوْسُ السَّلَامُ الْمُؤْمِنُ الْمُھَیْمِنُ الْعَزِیْزُالْجَبَّارُالْمُتَکَبِّرُ۔ سُبْحَانَ اللّٰہِ عَمَّا یُشْرِکُوْنَ (23)

اللّٰہُ الْخَالِقُ الْبَارِئُ الْمُصَوِّرُ لَہ الْأَسْمَآءُ الْحُسْنٰی ۔ یُسَبِّحُ لَہُ مَا فِی السَّمٰوٰتِ وَالْأَرْضِ وَھُوَالْعَزِیْزُالْحَکِیْمُ (24)[1]

اور اکثر اولیاء اللہ نے فرمایا ہے اسم ھُو اسم اعظم ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

شمع شبستان رضا (علامہ اقبال احمد نوری)

تنویرُالاسماء (عامل الحسنات مولانا سید واحد علی نقوی پرشدیپوری)

  1. سورۃ الحشر