ہنری فورڈ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
ہنری فورڈ
(انگریزی میں: Henry Ford ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Henry ford 1919.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 30 جولا‎ئی 1863[1][2][3][4][5][6][7]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 7 اپریل 1947 (84 سال)[8][1][2][3][4][5][6]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ڈئربورن، مشی گن[8]  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجہ وفات دماغی جریان خون  ویکی ڈیٹا پر (P509) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات طبعی موت  ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of the United States (1795-1818).svg ریاستہائے متحدہ امریکا[9][10][11]  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی برائنt اینڈ سٹریٹن کالج  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ کارجو،  انجینئر،  موجد،  مصنف،  سیاست دان،  ریسنگ ڈرائیور،  صحافی،  صنعت کار،  رئیس بیوپار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان انگریزی  ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[12]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کھیل گاڑیوں کی دوڑ  ویکی ڈیٹا پر (P641) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دستخط
Henry Ford Signature.svg
 

ہنری فورڈ (انگریزی: Henry Ford) (پیدائش: 30 جولائی 1863ء – وفات: 7 اپریل 1947ء) فورڈ موٹر کمپنی کے بانی اور گاڑیوں کی بڑے پیمانے پر پیداوار کے لیے ان کی ہیئت سازی کے جدید خطوط استوار کرنے کے بانی ہیں۔ ان کی ماڈل T گاڑیوں نے نقل و حمل اور امریکی صنعت میں انقلاب برپا کر دیا۔ وہ ایک زرخیز ذہن کے مالک موجد تھے اور انہیں 161 امریکی سندِ حقِ ایجاد سے نوازا گیا۔

فورڈ کمپنی کے واحد مالک کی حیثیت سے آپ دنیا کے امیر اور مشہور ترین افراد میں سے ایک تھے۔ سستی گاڑیوں کی پیداوار کے ساتھ ساتھ ملازمین کو اعلیٰ تنخواہیں دینے کے باعث بھی آپ نے نیک نامی حاصل کی جو 1914ء میں 5 ڈالرز فی دن مقرر کی گئی تھی۔

ناقص تعلیم کے باوجود آپ ایک اعلیٰ سوچ رکھتے تھے، خصوصاً صارف کے مفادات تاحیات آپ کے مطمح نظر رہے۔ اخراجات کو کم کرنے سے بھرپور وابستگی کے نتیجے میں کئی تکنیکی و کاروباری اختراعات سامنے آئیں جن میں ایک وکیلوں کا نظام بھی شامل تھا جس کے نتیجے میں شمالی امریکہ کے ہر شہر میں اور چھ بر اعظموں کے بڑے شہروں میں، ایک خوردہ فروشی کے مراکز قائم ہوئے۔ فورڈ اپنی کثیر دولت کو فورڈ فاؤنڈیشن کے لیے چھوڑ گئے، تاہم فورڈ کمپنی کا نظم و ضبط مستقلاً اپنے خاندان کے حوالے کر گئے۔

  1. ^ ا ب NE.se ID: https://www.ne.se/uppslagsverk/encyklopedi/lång/henry-ford — بنام: Henry Ford — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Nationalencyklopedin
  2. ^ ا ب فائنڈ اے گریو میموریل شناخت کنندہ: https://www.findagrave.com/memorial/352 — بنام: Henry Ford — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. ^ ا ب پیرایج پرسن آئی ڈی: https://wikidata-externalid-url.toolforge.org/?p=4638&url_prefix=https://www.thepeerage.com/&id=p33409.htm#i334089 — بنام: Henry Ford — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — مصنف: ڈئریل راجر لنڈی — خالق: ڈئریل راجر لنڈی
  4. ^ ا ب ایس این اے سی آرک آئی ڈی: https://snaccooperative.org/ark:/99166/w6xk8d59 — بنام: Henry Ford — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  5. ^ ا ب دائرۃ المعارف بریطانیکا آن لائن آئی ڈی: https://www.britannica.com/biography/Henry-Ford — بنام: Henry Ford — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017 — عنوان : Encyclopædia Britannica
  6. ^ ا ب https://brockhaus.de/ecs/julex/article/ford-henry — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  7. ایس این ایل آئی ڈی: https://wikidata-externalid-url.toolforge.org/?p=4342&url_prefix=https://snl.no/&id=Henry_Ford — بنام: Henry Ford — عنوان : Store norske leksikon
  8. ^ ا ب مدیر: الیکزینڈر پروکورو — عنوان : Большая советская энциклопедия — اشاعت سوم — باب: Форд Генри
  9. http://www.nytimes.com/2005/05/26/garden/26walt.html
  10. http://www.nytimes.com/2012/09/03/opinion/henry-ford-when-capitalists-cared.html
  11. Libris-URI: https://libris.kb.se/katalogisering/pm14bgd747jwn36 — اخذ شدہ بتاریخ: 24 اگست 2018 — شائع شدہ از: 31 اکتوبر 2012
  12. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb122359096 — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — مصنف: فرانس کا قومی کتب خانہ — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ