ہیرا دیوی وائیبا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ہیرا دیوی وائیبا
Hira Devi Waiba.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 9 ستمبر 1940  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دار جیلنگ  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 19 جنوری 2011 (71 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
سلی گوڑی  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد نونیت آدتیہ وئبا[2]  ویکی ڈیٹا پر (P40) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ گلو کارہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ہیرا دیوی کو 1986 میں دارجیلنگ کے نیپالی اکیڈیمی نے دوستراسن پورشکر ، سکم حکومت نے 1996 میں متراسن اسمرتی پورسکار ، بھنو اکیڈمی پوراسکر ، 2001 میں اگام سنگھ گری پوریکاکر اور گورکھا سید خدمت کمیٹی کے لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازا تھا۔ نیپال حکومت نے انہیں گورکھا جنوبیہ باہو ، سدھانا سمن اور مدھوریما پھول کماری مہتو ایوارڈ سے بھی نوازا تھا۔[3] ہیرا دیوی وائیبا (9 ستمبر 1940 – 19 جنوری 2011) نیپالی زبان کی ہندوستانی لوک گلوکارہ تھیں اور انہیں نیپالی لوک گانوں کی سرخیل کی حیثیت سے سراہا جاتا ہے۔کہا جاتا ہے کہ ان کا گانا " چورا تا ہوینا آسٹورا " اب تک ریکارڈ کیا گیا پہلا تامنگ سیلو (نیپالی لوک موسیقی کی ایک صنف) ہے۔ ہیرا دیوی وائیبا واحد نیپالی لوک گلوکارہ ہیں جنھوں نے HMV کے ساتھ البمز کیے[4] وہ آل انڈیا ریڈیو کے ساتھ واحد اے گریڈ نیپالی لوک گلوکارہ تھیں۔ وہ پہلی موسیقارہ تھیں جنہیں نیپال کے ایک مشہور میوزک ہاؤس میوزک نیپال نے ریکارڈ کیا اور ان کا البم جاری کیا۔

موسیقی اور زندگی[ترمیم]

حرا دیوی کا تعلق موسیقاروں کے ایک خاندان سےتھا۔ انہوں نے 40 سالوں پر محیط اپنے میوزیکل کیریئر کے دوران قریب 300 لوک گیت گائے ہیں۔[5] اس کے گلوکاری کیریئر کا آغاز اس وقت ہوا جب انہوں نے 1966 میں ریڈیو نیپال کے لیے تین گانے ریکارڈ کیے۔ انہوں نے 1963 سے 1965 تک آل انڈیا ریڈیو اسٹیشن میں کام کیا۔[6] اپنے والد کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے ، ہیرا دیوی نے 2008 میں سلگوری کے قریب کدمتلا میں اپنے گھر پر ایس ایم وائیبہ انٹرنیشنل میوزک اینڈ ڈانس اکیڈمی کھولی تھی۔

وفات[ترمیم]

ہیرا دیوی کا انتقال 19 جنوری 2011 کو 71 سال کی عمر میں گھر میں آگ لگ جانے کے حادثے میں ہوا۔[3] ان کے دو بچے نونیت آدتیہ وئبا اور ستیہ آدتیہ وئبا ہیں جو دونوں ہی موسیقار ہیں [7]

ایوارڈ[ترمیم]

ہیرا دیوی کو 1986 میں دارجیلنگ کے نیپالی اکیڈیمی نے دوستراسن پورشکر ، سکم حکومت نے 1996 میں متراسن اسمرتی پورسکار ، بھنو اکیڈمی پوراسکر ، 2001 میں اگام سنگھ گری پوریکاکر اور گورکھا سید خدمت کمیٹی کے لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازا تھا۔ نیپال حکومت نے انہیں گورکھا جنوبیہ باہو، سدھانا سمن اور مدھوریما پھول کماری مہتو ایوارڈ سے بھی نوازا تھا۔[3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. http://www.telegraphindia.com/1110120/jsp/siliguri/story_13466851.jsp
  2. مدیر: ویکیپیڈیا برادری — خالق: جیمی ویلز اور لیری سینگر
  3. ^ ا ب پ "Hira Devi dies of burn injuries". The Telegraph. 25 اکتوبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 جولا‎ئی 2012. 
  4. "चुरा त होइन अस्तुरा - पहिलो तामाङ सेलो गीत ? - Tamang Online". Tamang Online (بزبان انگریزی). 7 December 2016. 04 مارچ 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 05 مارچ 2018. 
  5. "Darjeeling's folk singer Hira Waiba dies of burn injuries". The Himalayan Times. اخذ شدہ بتاریخ 21 جولا‎ئی 2012. [مردہ ربط]
  6. "North Bengal & Sikkim | School for Nepali folk music". The Telegraph. Calcutta (Kolkata). 05 مارچ 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 05 مارچ 2018. 
  7. "Navneet Aditya Waiba, Satya Waiba". The Telegraph. 02 فروری 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 جنوری 2017.