یریحو کے نزدیک نابینا کی شفا یابی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
یریحو کے نزدیک نابینا کی شفایابی کی پینٹنگ۔

یریحو کے نزدیک نابینا کی شفایابی یسوع کے معجزات میں سے ایک ہے۔ اناجیل متوافقہ کے مطابق جب یسوع یریحو شہر میں پہنچے جو یروشلم سے اٹھارہ میل کے فاصلہ پر تھا تو آپ کو راہ کے کنارے بیٹھا ہوا ایک بھکاری ملا جو اندھا تھا۔ "وہ بھیڑ کے جانے کی آواز سن کر پوچھنے لگاکہ یہ کیا ہو رہا ہے؟ انہوں نے اسے خبر دی کہ یسوع ناصری جا رہا ہے۔ اس نے چلا کر کہا اے یسوع ابن داؤد مجھ پر رحم کر۔ جو آگے جاتے تھے وہ اس کو ڈانٹنے  لگے کہ چپ رہے مگر وہ اور بھی  چلایا کہ اے ابن داؤد مجھ پر رحم کر۔ یسوع نے کھڑے ہو کر حکم دیا کہ اس کو میرے پاس لاؤ۔ جب وہ نزدیک  آیا تو اس نے اس سے پوچھا تو کیا چاہتا ہے کہ میں تیرے لیے کروں؟ اس نے کہا اے خداوند یہ کہ میں بینا ہوجاؤں۔ یسوع نے اس سے کہا بینا ہوجا۔ تیرے ایمان نے تجھے اچھا کیا۔ وہ اسی دم بینا ہو گیا اور خدا کی تمجید کرتا ہوا اس کے پیچھے ہولیا اور سب لوگوں نے دیکھ کر خدا کی حمد کی۔"[1] اس نابینا کا نام برتمائی ابن تومائی تھا جو بھیک مانگا کرتا تھا۔[2]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. انجیل شریف بہ مطابق لوقا باب 18 آیت 35 تا 43
  2. انجیل شریف بہ مطابق مرقس باب 10 آیت 46 تا 52