یہودی ریاست

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

یہودی ریاست ایک سیاسی اصطلاح ہے جو اسرائیل کی مملکتی ریاست کو بیان کرنے کے لیے استعمال کی جاتی ہے۔[1]

تھیوڈور ہرزل نظریۂ صیہونیت کا بانی ہے۔ اس کا اہم خاصہ یہ ہے کہ اسے یہودیوں میں ایک قومی مفکر کی حیثیت حاصل ہے۔ اس نے 1897ء میں تحریک صیہونیت کی بنیاد رکھی تھی۔ اس تحریک کا اہم ایجنڈا یہ تھا کہ دنیا بھر میں بکھرے ہوئے یہودیوں کے لیے ایک قومی وطن کا قیام ناگزیر ہے۔ تاہم فرانس اور لندن کے بعض بااثر یہودی صیہونیت کو یہودیت کے سیاسی مسئلے کا حل نہیں سمجھتے تھے۔ ان کی متصادم رائے یہ تھی کہ امریکہ اور یورپ میں رہ کر اور وہاں کے حکمرانوں سے بہتر تعلقات قائم کر کے بھی یہودی پُر امن طور پر رہ سکتے ہیں۔ بالخصوص برطانیہ کا یہودی مفکر اسرائیل زینگول اسی نظریے کا حامی تھا۔[2]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Glenn Kessler۔ "Defining 'Jewish state': The term was coined by Theodor Herzl, founder of the modern Zionist movement. For some, the term has different meanings"۔ The Washington Post۔
  2. رضی الدین سید۔ "اسرائیل کا اعتراف اور یہودی"۔ Al-Arabia۔ مورخہ 7 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔