2014 الجزائری لوک ہیڈ سی-130 ہرکولس حادثہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

2014 الجزائری لوک ہیڈ سی-130 ہرکولیس حادثہ
حادثہ کا شکار ہوائی جہاز کی طرز کا دوسرا الجزائری سی-130 جہاز
تصادم کا خلاصہ
تاریخ حادثہ 11 فروری 2014 (2014-02-11)
بمقام عین کرشہ، صوبہ ام البواقی، الجزائر کے قریب
مسافروں کی تعداد 78
اموات 77
نجات یافتگان 1
طرز جہاز لوک ہیڈ سی-130 ہرکولیس
رجسٹریشن نمبر 7T-WHM
مقام پرواز تمنراست، الجزائر
مقام سقوط ورقلہ، الجزائر
منزل قسنطینہ، الجزائر

11 فروری 2014 کو الجزائری ائیر فورس کا ایک لوک ہیڈ سی-130 ہرکولیس جہاز حادثے میں تباہ ہو گیا۔ حادثہ جبل فرطاس میں پیش آیا۔ جائے حادثہ عین کرشہ، صوبہ ام البواقی کے قریب ہے۔[1] اس حادثے میں قریبا ً 77 افراد مارے گئے اور 1 کے زندہ بچ جانے کی اطلاع ہے۔[2][3]

غالب گمان یہ ہے کہ اس حادثہ کا سبب موسم کی خرابی تھا۔[4][5]

جہاز[ترمیم]

جہاز لوک ہیڈ سی-130 ہرکولس طرز کا تھا، جو ریاستہائے متحدہ میں تیار کیا جاتا ہے۔ جہاز کا نمبر 7T-WHM تھا اور 1982 میں تیار کیا گیا تھا۔ لوک ہیڈ مارٹن کمپنی کا بیان ہے کہ اس نے سی 130 جہاز الجزائری افواج کو 1982 اور 1990 کے درمیان میں فروخت کیے تھے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "ASN Aircraft accident Lockheed C-130H-30 Hercules 7T-WHM Aïn Kercha"۔ Aviation Safety Network۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 فروری 2014۔
  2. "Military Plane Crash in Algeria Leaves Scores Dead"۔ nytimes۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 فروری 2014۔
  3. "At least 103 dead after military plane crashes in Algeria"۔ Voice of Russia۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 فروری 2014۔
  4. "TV: Over 100 feared dead as military plane crashes in Algeria (update)"۔ Trend News Agency۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 فروری 2014۔
  5. "Over 100 feared dead as military plane crashes in Algeria – local TV"۔ RT۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 فروری 2014۔