فاصل درجۂ حرارت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(Critical point (thermodynamics) سے رجوع مکرر)
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

اگر کسی گیس کو دبایا اور سرد کیا جاۓ تو وہ مائع حالت میں تبدیل ہو جاتی ہے. وہ زیادہ سے زیادہ درجہ حرارت جس پر ایک گیس مائع حالت میں تبدیل ہو سکتی ہے اسے اس گیس کا کریٹیکل ٹمپریچر critical temperature کہتے ہیں.جب تک کسی گیس کو کریٹیکل ٹمپریچر تک یا اس سے بھی زیادہ ٹھنڈا نہ کر دیا جاۓ اسے مائع بنانا ناممکن ہوتا ہے چاہے دباؤ کتنا ہی زیادہ کیوں نہ ہو.
اگر کسی مائع کو ایک مناسب بند برتن میں گرم کیا جاۓ تو جیسے جیسے درجہ حرارت بڑھتا جاتا ہے مائع کی کثافت کم ہوتی چلی جاتی ہے جبکہ مائع کی سطح کے اوپر اسکے بخارات (جو گیس کی شکل میں ہوتے ہیں) ان کی کثافت بڑھتی چلی جاتی ہے یہاں تک کہ ایک ایسا درجہ حرارت آ جاتا ہے جس پر مائع اور اسکے بخارات (گیس) دونوں کی کثافت برابر ہو جاتی ہے. کثافت برابر ہو جانے سے مائع اور گیس الگ الگ نہیں رہ سکتے اور باہم مدغم ہو جاتے ہیں. اس درجہ حرارت کو کریٹیکل ٹمپریچر اور اس دباؤ کو کریٹیکل پریشر کہتے ہیں. نقطہ انجماد اور نقطہ کھولاؤ کی طرح مختلف چیزوں کا کریٹیکل ٹمپریچر اور کریٹیکل پریشر مختلف ہوتا ہے.

Phase-diag.svg






کوئ بھی مائع اپنے کریٹیکل ٹمپریچر یا اس سے زیادہ درجہ حرارت پر اپنی مائع شکل برقرار نہیں رکھ سکتا. اسی طرح اگر کسی گیس کا درجہ حرارت کریٹیکل درجہ حرارت سے زیادہ بڑھ جاۓ تو دباؤ خواہ کتنا بھی زیادہ کیوں نہ ہو اس گیس کو مائع حالت میں تبدیل نہیں کیا جا سکتا اور اگر گیس پہلے سے ہی مائع حالت میں تھی اور اس کا درجہ حرارت بڑھتے بڑھتے کریٹیکل درجہ حرارت پر پہنچ جاۓ تو وہ مائع سے گیس میں تبدیل ہو جاۓ گی چاہے دباؤ کتنا ہی زیادہ کیوں نہ ہو.

Substance[1][2] Critical temperature (°C) Critical temperature (K) Critical pressure (atm) Critical pressure (MPa)
Argon −122.4 150.8 48.1 4.870
Bromine 310.8 584 102 10.340
Chlorine 143.8 417 76.0 7.700
Fluorine −128.85 144.3 51.5 5.220
Helium −267.96 5.19 2.24 0.227
Hydrogen −239.95 33.2 12.8 1.297
Krypton −63.8 209.4 54.3 5.500
Neon −228.75 44.4 27.2 2.760
Nitrogen −146.9 126.2 33.5 3.390
Oxygen −118.6 154.6 49.8 5.050
CO2 31.04 304.1 72.8 7.377
Xenon 16.6 289.7 57.6 5.840
Lithium 2,950 3,223 65.2 6.700
Mercury 1,476.9 1,750 1,587 160.008
Iron 8,227 8,500
Gold 6,977 7,250 5000 5.300
Aluminium 7,577 7,850
Tungsten 15,227 15,500
Water[3] [4] 373.936 647.096 217.7 22.059



بعض گیسوں کا کریٹیکل درجہ حرارت اتنا زیادہ ہوتا ہے کہ انہیں محض دباؤ سے مائع بنایا جا سکتا ہے مثلآ نائٹرس آکسائڈ اور پروپین. اسی طرح اگر زیادہ گرمی نہ پڑ رہی ہو تو کاربن ڈائ آکسائڈ CO2 کو بغیر ٹھنڈا کیۓ محض دبا کر مائع یا ٹھوس بنایا جا سکتا ہے کیونکہ اسکا کریٹیکل ٹمپریچر31.1 ڈ گری سینٹی گریڈ ہوتا ہے.

اکثر گیسوں کو مائع بنانے کے لئے انتہائ درجہ تک ٹھنڈا کرنا پڑتا ہے مثلآ ہائڈروجن اور ہیلیم۔

مزید دیکھیۓ[ترمیم]


خطا در حوالہ: <ref> ٹیگس موجود ہیں، لیکن <references/> ٹیگ موجود نہیں