پاول وٹزلویک

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

Paul Watzlawick

پاول وٹزلویک

پیدائش:25 جولائی 1921ء

انتقال: 31مارچ 2007ء

مشہور فلسفی، ماہرِ نفسیات۔جنوبی آسٹریا میں Villach کے مقام پر پیدا ہوئے۔ اُنہوں نے وینس اور زیورچ میں تعلیم حاصل کی اور اَیل سلواڈور یونیورسٹی میں پڑھانے کے بعد 1960ء میں امریکہ چلے گئے۔ 1967ء کے بعد سے وہ Stanford یونیورسٹی اور Mental ریسرچ انسٹی ٹیوٹ میں پڑھاتے رہے۔

اُنہوں نے نفسیاتی علاج اور فیملی تھیراپی کے حوالے سے اہم تحقیق کی۔ اپنی تحقیق میں اُنہوں نے انتہائی پیچیدہ اور مجرد عوامل مثلاً ابلاغ کے شعبے کو کنٹرول کرنے والے اصول و ضوابط کو موضوع بنایا۔ اُن کا کہنا تھا، یہ ممکن ہی نہیں ہے کہ کوئی شخص ابلاغ نہ کرے۔

اپنے پیچیدہ خیالات کو بھی وہ مختصر اور واضح جملوں میں بیان کرنے پر دسترس رکھتے تھے۔

وہ مزاحیہ انداز میں اور زندگی سے قریب تر تشبیہات اور استعاروں کی مدد سے اپنے نظریے کچھ اِس طرح سے بیان کرتے تھے کہ وہ آسانی سے پڑھنے اور سننے والے کی سمجھ میں آ جائیں۔ مثلاً اُن کے مشہور جملوں میں سے ایک یہ بھی ہے کہ ایسے ہاتھیوں کے خلاف جنگ کرنے سے، جو موجود ہی نہ ہوں، انسان کو ناخوشی ہی ملتی ہے۔ اُن کی بہت زیادہ مقبول اور بڑی تعداد میں فروخت ہونے والی کتاب ہے: ناخوش رہنے کے رہنما اصول