تبادلۂ خیال:سر سید احمد خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

سر سید احمد خان ایک ایسا دمکتا ستارہ تھے جنھون نے مسلمانوں کوامایوسی کے اندھیرے میں روشنی دی۔ان کے کردار اور ان کی مھنت کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ جب وہ تعلیمی فند کے لیے ان مسلمانون کے پاس پہنچے جن کے پاس پیسہ تو بہت تھا لیکن وہ ناچنے والی عورتوں پر لٹاتے تھے۔آپ نے ان سے کہا کہ اے لوگو اگر تم یہ پیسہ ان بازاری عورتوں پر ہی لٹاسکتے ہو تو خدا کی قسم میں تمھارے سامنے ناچنے کو بھی تیار ہوں۔مجھے بس پیسہ دو تاکہ میں اسے تعلیم کے اوپر لگا سکوں۔ بلاشبہ ایسے ہی جذبے سے سرشار انسان ہی کامیاب ہوتے ہیں۔

حافظ محمدنعیم عباس(نوجوان مصنف وقلم کار)جوہرآباد

  • یہ مضمون وکی پیڈیا کے معیار کے مطابق غیر جانبدار نہیں بلکہ ایک مسلمان لکھاری کی تحریر سے سر سید احمد خان کو متعارف کراتا ہے۔ بدقسمتی سے اکثر ایسے مضامین اسی خامی کا شکار ہیں۔ --قیصرانی 19:56, 28 جولا‎ئی 2011 (UTC)
  • قیصرانی صاحب سے مجھے اتفاق ہے۔ تاہم صفائی کی کوشش جاری ہے۔ فیصل انس (تبادلۂ خیالشراکتیں) 16:47، 4 مئی 2019ء (م ع و)

guzra hua zamana[ترمیم]

guzra hua zamana 113.203.128.223 12:24, 4 دسمبر 2012 (م ع و)