ابو عباس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
ابو عباس

پیدائش: دسمبر 1948ء

ابو عباسیک جہاز کی ہائی جیکنگ کے منصوبے کے ذمہ دار فلسطینی حریت پسند۔فلسطین لبریشن فرنٹ کے بانی اور رہنما۔

انتقال:8 مارچ 2004ء

تاریخ[ترمیم]

عباس ان کئی فلسطینیوں میں سے ایک تھے جنہوں نے انیس سو پچاسی میں اسرائیل کی حراست سے پچاس فلسطینوں کو رہا کرانے کی غرض سےجہاز ہائی جیک کر لیا تھا۔دو دن جاری رہنے والی اس ہائی جیکنگ میں مسلح فلسطینیوں نے ویل چیئر پر سوار ایک امریکی یہودی کو گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا اور اس کی لاش پھینک دی تھی۔اس واقعہ کے بعد مصر نے ہائی جیکروں کو حفاظت کے ساتھ نکل جانے کی ضمانت دی تھی لیکن اس رعایت کے بدلے جہاز پر یرغمال کئی امریکیوں کو رہا کرا لیا گیا تھا۔تاہم ہائی جیکروں کو تیونس کی طرف جانے والا یہ جہاز امریکہ کی نیوی کے طیاروں کی نظر میں آگیا اور اسے اٹلی اترنے پر مجبور کر دیا گیا تھا۔

سزائيں[ترمیم]

عباس کے ساتھیوں کو طویل سزائیں سنائی گئی تھیں لیکن اٹلی میں حکام نے عباس کو رہا کر دیا تھا کیونکہ ان کے خلاف ثبوت ناکافی تھا۔تاہم بعد میں غیر موجودگی میں انہیں یہ کہہ کر پانچ سال کی سزا سنائی گئی کہ انہوں نے اس ہائی جیکنگ کا منصوبہ بنایا تھا۔عباس نے گزشتہ سال گرفتار ہونے سے قبل تقریباً سترہ سال عراق میں گزارے۔انیس سو چھیانوے میں انہوں نے کہا تھا کہ جہاز پر سوار امریکی یہودی کو ہلاک کرنا ایک غلطی تھی۔

موت[ترمیم]

مارچ 2003 میں امریکی افواج نے انھیں بغداد سے فرار ہوتے وقت گرفتار کر لیا۔ مارچ 2004 میں امریکیوں نے انھیں شہید کر دیا۔

حوالہ جات[ترمیم]