قانون بوائل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

بوائل کے قانون (Boyle's law) کے مطابق کسی گیس کا حجم اسکے دباو (پریشر) کے بالعکس متناسب ہوتا ہے بشرطیکہ درجہ حرارت ( ٹمپریچر) اور گیس کی مقدار تبدیل نہ ہو۔

اس خاکے میں دکھایا گیا ہے کہ پریشر بڑھانے پر گیس کا حجم کم ہو جاتا ہے۔

Robert Boyle کا بنایا ہوا یہ قانون پہلی دفعہ 1662 میں چھاپا گیا تھا۔
اس قانون کو اس طرح بھی بیان کیا جا سکتا ہے کہ اگر درجہ حرارت ( ٹمپریچر) اور گیس کی مقدار تبدیل نہ تو ہو گیس کے حجم اور دباو کا حاصل ضرب ایک مستقل ہو گا۔

\qquad\qquad pV = k

یہاں p سے مراد گیس کا پریشر، V سے مراد گیس کا حجم اور k کا مطلب ایک مستقل مقدار ہے۔

P_1 V_1=P_2 V_2\,

اگر کسی گیس پر دباو دوگنا کر دیا جائے تو گیس عارضی طور پر تھوڑی گرم ہو جاتی ہے لیکن جب اسکا ٹمپریچر واپس کمرے کے ٹمپریچر کے برابر ہو جاتا ہے اس وقت اسکا حجم پہلے والے اصل حجم کا آدھا ہو جاتا ہے۔

A graph of Boyle's original data

مختصر یہ کہ اس قانون کے مطابق ، اگر ہم گیس کا پریشر کم کریں تو والیم زیادہ ہوگی اور اگر پریشر زیادہ کریں تو والیم کم ہوگی۔یعنی گیس کے پریشر یا والیم میں سے اگر ایک چیز بڑھتا ہے تو دوسراں کم ہوگا اور اگر ایک کم ہوتا ہے تو دوسراں بڑھے گا۔

جس زمانے میں یہ قانون پیش کیا گیا تھا اس وقت بہت کم درجہ حرارت یا بہت زیادہ پریشر حاصل کرنا ممکن نہ تھا اور یہ قانون درست معلوم ہوتا تھا۔ بعد میں پتہ چلا کہ بہت زیادہ ٹھنڈا ہونے پر یا بہت زیادہ پریشر پر گیس کا برتاو بوائل کے قانون سے ذرا مختلف ہوتا ہے کیونکہ اتنے کم ٹمپریچر یا بہت زیادہ پریشر پر گیس ideal gas جیسا برتاو نہیں کرتی۔

مزید دیکھیئے[ترمیم]