آئ-اے-ایس 17

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

بین الاقوامی معیار برائے اکاؤنٹ سازی- سترہ یا لیزز[ترمیم]

مقصد[ترمیم]

1 - اس اکاؤنٹنگ معیار کا مقصد لیسیز اور لیسرز کے لیے لیزوں پر مناسب اکاؤنٹنگ پالیسیاں اور ڈسکلوژرز متعارف کرانا ہے -

دائرۂ کار[ترمیم]

2 –اس معیار کا اطلاق ذیل میں درج لیزوں کے علاوہ تمام لیزوں پر ہونا چاہیے :

(الف) مادنیات، تیل، قدرتی گیس اور ایسی ہی دیگر نان-ری جینریٹو وسائل کو تلاش کرنے کے لیے کی گئی لیزیں -

(ب) موشن پکچر فلموں، وڈیو ریکارڈنگ، ناٹک، مینو اسکرپٹس، جملۂ حقوق، پیٹنٹز کے لائسینسی معاہدے۔

تاہم اس معیار کو مندرجہ ذیل چیزوں کے لیے پیمائش کا معیار نہیں بنایا جاسکتا:

(الف) وہ جائداد، لیسیز نے جس کی اکاؤنٹسازی آؤ-اے-ایس چالیس: چالیسویں میعار کے تحت بطور جائداد برائے سرمایاکاری کی ہو(دیکھیے آؤ-اے-ایس چالیس

(ب) وہ جائداد برا‎ئے سرمایاکاری لیسرز نے جس کی اکاؤنٹسازی بطور آپریٹنگ لیز کی ہو؛

(ج) وہ حیاتیاتی اثاثے لیسرز نے جس کی اکاؤنٹسازی بطور فائنینس لیز کی ہو؛

یا

(د) وہ حیاتیاتی اثاثے لیسیز نے جس کی اکاؤنٹسازی بطور آپریٹنگ لیز کی ہو (دیکھیے آؤ-اے-ایس اکتالیس۔

3 –یہ معیار ان معاہدوں پر بھی لاگو ہوگا جو اثاثوں کا حقّ استعمال منتقل کرنے کے باوجود اس کے کہ آپریشن اور مینٹیننس سے منسلک لیسر کی خدمات لی جاتیں ہوں۔ اس معیار کا اطلاق ان معاہدوں پر نہیں ہوتا جو دراصل کانٹریکٹ برائے خدمات ہیں اور ح‍قّ استعمال لیسیز کو منتقل نہیں کرتے۔

حوالہ جات[ترمیم]