اونٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

دنیا میں آج غالباً 1.4 کروڑ اونٹ موجود ہیں۔ جن میں سے اکثریت افریقہ کے کئ ممالک مثلآ صومالیہ، سوڈان، اور موریطانیہ میں ہے۔ ایک خاص اونٹ، باکٹیری اونٹ، اب صرف 14 لاکھ کی ابادی رکھتا ہے لیکن کئ صدیوں پہلے یہ ایشیا کے دیگر کونوں میں پایا جاتا تھا۔ پاکستان میں اونٹوں کے تعداد زیادہ تر سندھ اور بلوچستان کے اندرونی اور ریگستانی علاقوں میں ہے۔اسے صحرا کا جہاز بھی کہتے ہیں،

اقسام[ترمیم]

اونٹ کی دو اقسام ہیں۔ ایک عربی اور دوسری بختیاری۔ عربی اونٹوں کی ایک کوہان ہوتی ہے جبکہ بختیاری اونٹوں کی دو کوہان ہوتی ہیں۔

استعمال[ترمیم]

انسانوں نے اونٹوں کو کم سے کم 3000 سال سے سواری کے لیے استعمال کیا ہے۔ اونٹوں کو ریگستان پار کرنے کے لیے بہترین طریقہ سمجھا جاتا ہے۔ اونٹ بہت بھاری بوج اٹھانے کے قابل بھی ہے، اور ریگستانی علاقوں میں سامان پہنچانے کے لیے اونٹ کو آج بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ اونٹ کا دودھ اور گوشت بھی صحت کے لیے بہت مفید ہوتا ہے، بلکہ گاۓ کے دودھ سے بہتر ہوتا ہے۔

اونٹ کی دوڑ[ترمیم]

کئی عرب ممالک میں اونٹوں کی دوڑ لگائی جاتی ہے۔ عموماً ان اونٹوں پہ پاکستانی بچے بٹھائے جاتے تھے، جو کئی دفعہ گر کر سخت زخمی ہوجاتے تھے اور کبھی کبھار وفات بھی پا جاتے۔ اس وجہ سے ان عرب ممالک میں اب اونٹ کی دوڑ میں روبوٹ بٹھائے جاتے ہیں جو دور سے کنٹرول ہوتے ہیں اور بچوں کو دوڑنے والے اونٹوں پہ بٹھانے پہ پابندی لگا دی گئی ہے۔

Tree and Two Camls.JPG

بیرونی روابط[ترمیم]