برٹچاری تحریک

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

برٹچاری تحریک روحانی اور معاشرتی ترقی کی ایک تحریک ہے جس کی بنیاد گروسادیا دت نے 1932 میں رکھی تھی۔ اس تحریک کا آغاز 1932 میں ہوا تھا۔ اس تحریک کا بنیادی مقصد برطانوی ہندوستان کے شہریوں میں حب الوطنی ، قومی شعور اور شہریت کا احساس پیدا کرنا تھا۔

بریٹچاری تنظیم[ترمیم]

اس تحریک کی سرگرمیاں گروسادیا دت کے ذریعہ قائم بنگلہ بریٹاچاری سمیتی کے ذریعہ پھیلائی گئیں ۔ ایسوسی ایشن کا ہیڈ آفس کولکاتہ کے 12 لاڈون اسٹریٹ میں تھا۔ یہ انجمن غیر منقسم بنگال کے متعدد علاقوں میں قائم کی گئی تھی۔ 1934 میں ، بریچاری بارٹا کے نام سے ایک رسالہ فرید پور بریچاری سمیتی کے بطور ترجمان شائع ہوا۔ بنگلہ شکاری سمیتی کے اقدام پر بنگلور طاقت کے نام سے ایک رسالہ 1937 میں شائع ہوا تھا۔ اس تحریک نے یورپ میں مقبولیت حاصل کی۔ برطانوی حکومت کو بھی اس تحریک کی حمایت حاصل تھی۔ [1]

اندراج کا طریقہ[ترمیم]

براٹاچاری تحریک میں شامل ہونے کے لئے ، کسی کو پہلے تین بیانات کو قبول کرنا پڑا۔ بیانات یہ ہیں:

  • مجھے بنگالی پسند ہے
  • میں بنگال کی خدمت کروں گا۔
  • میں بنگال کا بریتاچاری ہوں۔

پھر اسے اس تحریک میں شامل ہونا پڑا پنچبراتا ، بریٹاچاری کا وعدہ ، براٹاچاری کا شولپنا ، براٹاچاری کا سولہ بیٹا کا ایک اضافی شرط ، براٹاچاری کا سترہ من (پابندی) ، بریٹاچری دائرے وغیرہ پڑھ کر۔ [2]

بریٹچاری تحریک کی خصوصیات[ترمیم]

براٹاچاری تحریک کا بنیادی مقصد بنگالی بریٹاچاریوں کو علم ، محنت ، سچائی ، اتحاد اور خوشی کے ساتھ جینے کے لئے رہنمائی کرنا تھا۔ ایمانداری ، تحمل ، استقامت اور بریٹاچاریوں کی خود انحصاری اس تحریک کی ایک خصوصیت تھی۔ اس تحریک کا بنیادی مقصد دماغی اور روحانی نشوونما حاصل کرنا تھا اور لوک رقص اور لوک موسیقی کی مشق کے ذریعے حب الوطنی کی تحریک پیدا کرنا تھا۔ [1] اس تحریک کے بانی گروسادیا دتہ نے لکھا ، اور دنیا کو انسان بننے ، ایک ابدی بنگالی ہونے کا مطالبہ کیا۔ [3] -

ষোল আনা বাঙ্গালি হ’

বিশ্ব মানব হবি যদি
শাশ্বত বাঙ্গালি হ’

شولانا بنگالی ہے۔

اگر دنیا انسان ہوتی ابدی بنگالی

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب [1],
  2. গুরুসদয় দত্ত, সৈকত আসগর, বাংলা একাডেমি, পৃ. ৬৭-৭০
  3. গুরুসদয় দত্ত, সৈকত আসগর, বাংলা একাডেমি, পৃ. ৫১