تویر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
  
تویر
(روسی میں: Тверь)
(روسی میں: Калинин)
(روسی میں: Тверь خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں باضابطہ نام (P1448) ویکی ڈیٹا پر
Soviet square in tver.jpg 

تویر
پرچم
تویر
نشان

تاریخ تاسیس 1135  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاسیس (P571) ویکی ڈیٹا پر
Map of Russia - Tver Oblast (2008-03).svg  خريطة الموقع

انتظامی تقسیم
ملک Flag of Russia.svg روس  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں ملک (P17) ویکی ڈیٹا پر[1][2]
تقسیم اعلیٰ توور اوبلاست  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں انتظامی تقسیم میں مقام (P131) ویکی ڈیٹا پر
جغرافیائی خصوصیات
متناسقات 56°51′28″N 35°55′19″E / 56.857827777778°N 35.921927777778°E / 56.857827777778; 35.921927777778  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں متناسقاتی مقام (P625) ویکی ڈیٹا پر
رقبہ 152.22 مربع کلومیٹر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رقبہ (P2046) ویکی ڈیٹا پر
بلندی 135 میٹر  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سطح سمندر سے بلندی (P2044) ویکی ڈیٹا پر
آبادی
کل آبادی 419363 (2017)  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں آبادی (P1082) ویکی ڈیٹا پر
مزید معلومات
جڑواں شہر
بیرگامو (1989–)
اوسنابرک (11 مئی 1991–)
بیزانسون
ویلیکو تارنوو (7 جون 1997–)
خمیلنیتسکیی
کیپوسوار  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں جڑواں شہر (P190) ویکی ڈیٹا پر
اوقات متناسق عالمی وقت+03:00  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں منطقہ وقت (P421) ویکی ڈیٹا پر
رمزِ ڈاک
170000–179999  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں ڈاک رمز (P281) ویکی ڈیٹا پر
فون کوڈ 4822  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی ڈائلنگ کوڈ (P473) ویکی ڈیٹا پر
باضابطہ ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں باضابطہ ویب سائٹ (P856) ویکی ڈیٹا پر
جیو رمز 480060  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں جیونیمز شناخت (P1566) ویکی ڈیٹا پر
[[file:|16x16px|link=|alt=]]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں کومنز نگارخانہ (P935) ویکی ڈیٹا پر

تویر روس کا ایک شہر ہے اور روس کے تویر اوبلاست کا انتظامی مرکز ہے ۔

محل وقوع[ترمیم]

تویر شہر ماسکو کے شمال مغرب میں 170 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے-

تاریخ[ترمیم]

تویر کے بارے میں پہلی تحریری شہادتیں 1164 کی ہیں- شہر کی شروعات رہبانیت گاہوں کی تعمیر سے ہوئی تھی جن کے پاس بعد میں صناعوں اور تاجروں نے ڈیرے ڈال لیے تھے- تویر کی تاریخ باثروت مند ہے- یہ یقین کے ساتھ کہا جا سکتا ہے کہ ماسکو کی طرح تویر بھی متحدہ روس کی تشکیل کا نقطہ آغاز ثابت ہوا تھا- یہ بہت مشکل ادوار تھے جب روس کے بڑے جاگیرداروں میں ٹھنی ہوئی تھی اور ہر ایک نے اپنے علاقے کو آزاد مملکت قرار دیا ہوا تھا- 1238 میں منگول باتو خان نے شہر کی اینٹ سے اینٹ بجادی تھی لیکن ایک بار پھر شہر کو اس کی راکھ پر دوبارہ استوار کیا گیا تھا- اور اسے روس کا اہم سیاسی اور ثقافتی مرکز بنادیا گیا تھا- تویر میں شبیہہ نگاری مقامی طور پر شروع ہوئی تھی اور ساتھ ہی دوسری حرفتیں بھی- کھدانی سے چھال پر لکھی ہوئی ایسی تحریری بھی ملی ہیں جن کا بارھویں تیرھویں صدی سے تعلق ہے جو ان پر انے وقتوں میں اہل تویر کی اعلٰی تہزیت کی شہادت ہیں-

اپنی ثقافی ثروت اور سیاسی اثر کے لحاظ سے تویر تب کسی طرح بھی ماسکو سے کمتر نہیں تھا- وہاں اتنی قوت اکٹھی ہوچکی تھی جس نے جاگرداروں کو متحد کر دیا تھا لیکن تاریخی پیچ و خم کے باعث تویر روسی شہروں کا دارلحکومت نہیں بن پایا تھا- 1327 میں منگول خان کا سفیر شیوکال تویر پہنچا اور اس نے اچانک تمام دھڑوں کے نمائندوں کو طلب کیا پھر اپنے لوگوں کے ہاتھوں شہرمیں ہر طرح کی ظلم وزبر دستی کا بازار گرم کر دیا- یہ افواہ پھیل گئی کہ شیوکال تمام عیسائیوی کو تاتاروں کا مذہب یعنی اسلام قبول کرنے پر مجبور کرنا چاہتا ہے چنانـچہ اہل تویر شیوکال کے خلاف اٹھ کھڑے ہوئے اور تاتاروں سے لڑکے انہیں پسپا کر دیا لیکن افسوس روس کے دوسرے جاگیرداروں نے تویر والوں کا ساتھ نہ دیا اور یوں اردوئے زریں یعنی منگولوں اور تاتاروں نے انتہائی مظالم روار کھتے ہوئے تویر کے آزادی پسند لوگوں کو شکست دے دی- ماسکو کا مدمقابل اب کوئی دوسرا شہر نہیں تھا یوں روسیوں کی شفیق ماں ہونے کا کردار ماسکو کی جھولی میں آپڑا تھا-

سولہویں اور سترہویں صدیوں میں تجارتی راہگزر اور دریا کے کنارے واقع ہونے کے باعث تویر ایک بار پھر روس کے شمال مشرق کا سب سے بڑا معاشی اور تجارتی مرکز بن گي تھاا- تراشے گئے پتھروں سے بنائے گئے گرجا گھروں اور لوگوں سے بھرے اس باثروت شہر میں دنیا بھر سے تاجر اکٹھے ہو گئے تھے، بحیرہ بالٹک کے ساحلی علاقوں سے، قفقاز سے، وسطی ایشیا اور مشرق وسطٰی سے - باہر سے آنے والے لوگ شہر تویر کو روس کا پھول کہتے تھے اور اسی تویر شہر سے 1466 میں تویر کا تاجر افانسی نکیتین تین سمندروں کے سفر پر نکل کھڑا ہوا تھا-

آج کا تویر[ترمیم]

آج کے تویر کی آبادی پانچ لاکھ نفوس ہے اور یہ ماسکو سے سڑک کے راستے سینٹ پیٹرزبرگ جاتے ہوئے ایک بڑا صنعتی شہر ہے جو اپنی مشین سازی کی صنعتوں اور چھاپہ سازی کے کارخانوں کے لیے مشہور ہے- یہاں یونورسٹی، کئی انسٹی ٹوٹ، تھیٹریں، عجائب گھر، موسیقی سکھانے کا ادارہ اور سرکس گھر ہیں- اس شہر میں چل پھر کی خوشی ہوتی ہے- یہاں قدیم کرملین، کئی گرجا گھر اور رہباینت گاہویں اب تک محفوظ ہیں- یہاں دریائے والگا کے کنارے کا منظر بہت ہی حسین ہے جہاں وہ بڑی بڑی عمارتیں ہيں جو صدیوں سے ہمیں دیکھ رہی ہیں- پھر دریا کے کنارے پر افاناسی نیکیتین کی یادگار بھی ایستادہ ہے جو ایک ایسا روسی سیاح تھا جس نے تویر میں دریائے وولگا سے سفر شروع کرکے ہم تک دور دیسوں کی بشمول ہندوستان کے معلومات پہنچاتی تھیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1.   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں جیونیمز شناخت (P1566) ویکی ڈیٹا پر"صفحہ تویر في GeoNames ID"۔ GeoNames ID۔ اخذ شدہ بتاریخ 3 جون 2019۔
  2.   خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں میوزک برائنز ایریا آئی ڈی (P982) ویکی ڈیٹا پر "صفحہ تویر في ميوزك برينز."۔ MusicBrainz area ID۔ اخذ شدہ بتاریخ 3 جون 2019۔