لطیفہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ایک فوجی لطیفہ۔ سوال ہے کہ آپ نے آج کیا بچایا۔ جواب رقم ہے کہ کم کھائیں اور کشتی سے کہیں اور بھیجے جانے سے بچیں۔ یعنی آپ خود مرجائیں گے تو آپ کہیں اور لے جانے کی حاجت نہیں ہوگی۔

لطیفہ یا مطایبہ، جسے بھارت میں کبھی کبھی چُٹکُلا (انگریزی: Joke) بھی کہتے ہیں، مزاح کا ایک اظہار ہے جس میں الفاظ کو مخصوص اور خوش اسلوبی سے بیان ڈھانچے استعمال کیا جاتا ہے تا کہ لوگ ہنسیں اور اس بات کو سنجیدگی سے نہ لیں۔ اس کی شکل ایک کہانی کی اختیار کرتی ہے جس میں مکالمے بھی ہوتے اور ایک اختتام پر عمومًا ایک دم دار فقرہ ہوتا ہے۔یہی فقرہ ہی عوام کو اس بات سے باخبر کرتا ہے کہ کہانی میں دوسرا اور متضاد معنی بھی موجود ہے۔اس میں ذو معنی الفاظ یا ظرافت کا استعمال ممکن ہے، جس میں منطقی غیر موزونیت، بے عقلی یا اور ذرائع کا استعمال ممکن ہے۔

مثالیں[ترمیم]

  • بیوی نے شوہر سے سونے (زیور) کی گولیاں منگوائی مگر تفہیمی غلطی کی وجہ سے شوہر سونے (نیند) کی گولیاں لا دیتا ہے (ذو معنی الفاظ)۔
  • اردو میں کچھ لطیفے قریب التلفظ حروف کے استعمال پر بھی ہیں، مثلًا تقریب اور تخریب۔
  • لوگوں کی کم فہمی کے لطیفے بھی عام ہیں۔ مثلًا یہ لطیفہ کہ ایک صاحب سونے کی انگوٹھی سڑک پر ڈھونڈ رہے تھے جب کہ انگوٹھی گھر میں گری تھی۔ اور اس کی وجہ یہ بتائی گئی کہ گھر پر اندھیرا ہے۔ اس سے لوگوں میں صحیح سوچ یا عقل کے صحیح استعمال کی کمی کی مثال کے طور پر بھی پیش کیا جاتا ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]