ولیم مارک ٹولی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

سرولیم مارک ٹولی کی پیدائش 24 اکتوبر 1935 کو ہوئی۔ [1] [2] وہ بی بی سی ، نئی دہلی کے سابق بیورو چیف ہیں۔ انہوں نے جولائی 1994 میں استعفی دینے سے قبل بی بی سی کے ساتھ 30 سال کی مدت کے لیے کام کیا۔ [3] وہ 20 سال تک بی بی سی ، دہلی کے چیف آف بیورو کے عہدے پر فائز رہے۔[4] وہ بہت سے ایوارڈز حاصل کع چکے ہیں وہ اورینٹل کلب کے ارکان بھی ہیں

ذاتی زندگی[ترمیم]

ٹولی کی پیدائش ٹولی گنج میں ہوئی [5] جہاں اس وقت برطانوی راج تھا۔ان کے والد ایک برطانوی تاجر تھے جو برطانوی راج کی ایک مینیجنگ ایجنسی میں شریک تھے۔ انہوں نے اپنے بچپن کا پہلا عشرہ ہندوستان میں گزارا ۔ چار سال کی عمر میں انہیں د ارجیلنگ کے "برٹش بورڈنگ اسکول" میں بھیجا گیا [6] [7] جہاں انہیں ہندوستانیوں سے بات چیت کی اجازت نہ تھی پھر انہیں نو سال کی عمر سے مزید تعلیم کے لیے انگلینڈ بھیج دیا گیا۔ انہوں نے ٹیوفورڈ اسکول (ہیمپشائر) ، ماربرورو کالج اور تثلیث ہال ، کیمبرج میں تعلیم حاصل کی جہاں انہوں نے تھیالوجی کی تعلیم حاصل کی۔ کیمبرج کے بعد ان کا ارادہ تھا کہ وہ چرچ آف انگلینڈ میں پجاری بنیں لیکن لنکن تھیلوجیکل کالج میں محض شرائط کی وجہ سےوہ اس پیشے سے دستبردار ہو گئے ٹولی کی ذاتی زندگی پیچیدہ رہی۔ 2001 میں اس کی شادی مارگریٹ ٹولی سے ہوئی۔ اس سے ان کے چار بچے ہیں۔۔

صحافتی کیریئر[ترمیم]

ٹولی نے 1964 میں بی بی سی میں شمولیت اختیار کی اور ہندوستانی نمائندے کی حیثیت سے کام کرنے کے لیے 1965 میں واپس ہندوستان چلے گئے۔ [2] [8] [9] انہوں نے اپنے دور اقتدار میں جنوبی ایشیا کے تمام بڑے واقعات کا احاطہ کیا ، جس میں ہند پاکستان تنازعات ، بھوپال گیس سانحہ ، آپریشن بلیو اسٹار (اور اس کے بعد اندرا گاندھی کا قتل ، سکھ مخالف فسادات) ، راجیو گاندھی کا قتل بابری مسجد کے انہدام تک شامل ہیں۔ [10] 13و [11]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Birthdays"۔ دی گارڈین۔ Guardian News & Media۔ 29 اکتوبر 2014۔ صفحہ 47۔
  2. ^ ا ب "Mark Tully: The voice of India"۔ London: BBC۔ 31 دسمبر 2001۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔
  3. Peter Victor (10 جولا‎ئی 1994)۔ "Tully quits BBC"۔ The Independent۔ London۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔
  4. "Media reportage: Interview with Mark Tully"۔ The Hindu۔ 20 فروری 2000۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔
  5. "Why Mark Tully needs a Calcutta birth certificate at 78"۔ BBC News۔ 20 اگست 2013۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 اگست 2013۔
  6. Brenda Lakhani۔ "British and Indian influences in the identities and literature of Mark Tully and Ruskin Bond"۔ University of North Texas۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔
  7. "Meeting Mark"۔ The Hindu۔ 18 جون 2007۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔
  8. Bob Drogin (22 دسمبر 1992)۔ "Profile The BBC's Battered Sahib Mark Tully has been expelled by India, chased by mobs and picketed. He loves his job."۔ Los Angeles Times۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔
  9. "After Blue Star"۔ BBC۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 جنوری 2010۔
  10. Mark Tully (5 دسمبر 2002)۔ "Tearing down the Babri Masjid"۔ London: BBC۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 جنوری 2010۔
  11. "It's Sir Mark Tully in UK honors list"۔ CNN۔ 31 دسمبر 2001۔ اخذ شدہ بتاریخ 25 نومبر 2009۔