ٹیکساس میں جنسی جرائم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

امریکا کی ریاست ٹیکساس میں خواتین کے خلاف جنسی جرائم کو نسبتاً کم سنجیدگی سے لیا جاتا ہے۔

ٹیکساس کی عدالت نے ایک مدرسہ کی نعرہ باز لڑکی کو 35000 ڈالر کا جرمانہ کیا کیونکہ اس کے اپنے ساتھ زنابالجبر کرنے والے کھلاڑی کے نام کا نعرہ لگانے سے انکار کر دیا تھا۔[1]

  1. گی آدمز (4 مئی 2011ء)۔ "Cheerleader must compensate school that told her to clap 'rapist'"۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔