پارس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

پارس ایک خیالی پتھر ہے۔ اس کے بارے میں مشہور ہے کہ اگر یہ لوہے سے چھو جائے تو اسے سونا بنا دیتا ہے

محاورہ[ترمیم]

  • پڑا پارس بیچا تیل یعنی کسی کے پاس پارس پتھر موجود تھا مگر اسے معلوم نہ تھا اور وہ زندگی بھر تیل بیچتا رہا۔[1] کہا جاتا ہے کہ یہی محاورہ بعد میں بگڑ کر "پڑھی فارسی بیچا تیل" بن گیا۔

حوالہ جات[ترمیم]