ڈراؤنا خواب

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

ڈراؤنا خواب یا کابوس ایک ایسا خواب ہوتا ہے جو اپنی جملہ نوعیت کے حساب سے ناگفتہ بہ ہے۔ اس خواب کی وجہ سے دماغ میں سخت جذباتی رد عمل رونما ہو سکتا ہے، جس میں خوف اور ناامیدی، تجسس اور گہرا صدمہ شامل ہو سکتا ہے۔ خواب میں کئی پریشان کن صورت حال، نفسیاتی یا جسمانی خوف یا کوئی اور چونکانے والی بات ممکن ہے۔ ڈراؤنے خوابوں کے متاثرین بے چینی کی حالت میں اٹھتے ہیں اور کم از کم ایک مختصر وقت تک وہ دوبارہ سو نہیں پاتے۔

ڈراؤنے خوابوں کے جسمانی وجوہ بھی ممکن ہیں جیسے کہ غیر آرام دہ یا عجیب و غریب حالت میں سونا، بخار کا ہونا یا پھر نفسیاتی وجوہ ممکن ہیں جیسے کہ تناؤ، تجس اور کئی ڈرگوں کے غیر متوقع رد عمل بھی ممکن ہیں جیسے کہ پی سیلوسائبین کھمبی (Psilocybin mushroom) کے لینے کے بعد کا اثر۔ یہ کھمبی اگر سونے سے پہلے لی جائے تو یہ جسم کے میٹابولزم اور دماغ کی فعالیت کو بڑھا دیتی ہے۔ اس سے ڈراؤنے خواب آتے ہیں۔

متواتر ڈراؤنے خوابوں کے لیے طبی مدد درکار ہو سکتی ہے، کیوں کہ یہ نیند کے لینے پر اثر انداز ہوتے ہیں اور بے خوابی کی کیفیت پیدا کر سکتے ہیں۔[1]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Stephen,، Laura (2006). "Nightmares". Psychologytoday.com. 31 اگست 2007 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 

مزید مطالعات[ترمیم]

ویکیمیڈیا العام پر Nightmares سے متعلقہ وسیط