گرو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

علم گرو/استاد ہےـ آج کل بھارت میں دنیاوی یا دینی/دھارمک علم دینے والے شخص کو گرو کہا جاتا ہے۔ ان میں پانچ درجات ہیں ـ 1. استاد/شِکسک - جو اسکولوں میں تعلیم فراہم کرتا ہےـ 2ـ آچاریہ- جو اپنے طرز عمل کے ساتھ سکھاتا ہےـ 3 كُل گرو - جو ورناشرم دھرم کے مطابق ادب سکھاتا ہےـ 4ـ دیكشا گرو - جو روایت کی پیروی کرتے ہوئے اپنے گرو کے حکم پر روحانی ترقی کے لیے منتر دیکشا دیتا ہے 5ـ گرو - اصل میں یہ لفظ قابل گرو یا پرم گرو کے لیے آیا ہےـ گرو کا مطلب ہے بھاری ـ علم سب سے بھاری ہے یعنی سب سے بلند ہے لہذا مکمل علم رکھنے والے با شعور مرد کے لیے گرو لفظ استعمال کیا جاتا ہے، اس کی ہی پوجا کی جاتی ہےـ نانک دیو، ترے لنگ سوامی، توتا پُري، رام کرشن پرم هنس، مہرشی رمن، سوامی سمرتھ، سوامی كرپاتري مہراج، مهاوتار بابا، لاهڈي مہاشیہ، هیڈاخان بابا، سومبار گِری مہراج، سوامی شِوانند، آنندمئ ماں، سوامی بملا نند جي، مہر بابا وغیرہ سچے گرو رہے ہیں ـ