آفاق حسین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
آفاق حسین ٹیسٹ کیپ نمبر 38
Afaq hussan.jpeg
کرکٹ کی معلومات
بلے بازیدائیں ہاتھ کا بلے باز
گیند بازیدائیں بازو کی آف بریک
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ کرکٹ فرسٹ کلاس کرکٹ
میچ 2 67
رنز بنائے 66 1448
بیٹنگ اوسط - 24.54
100s/50s -/- 1/5
ٹاپ اسکور 35* 122*
گیندیں کرائیں 240 9301
وکٹ 1 214
بولنگ اوسط 106.00 19.42
اننگز میں 5 وکٹ - 14
میچ میں 10 وکٹ - 5
بہترین بولنگ 1/40 8/108
کیچ/سٹمپ 2/- 52/-
ماخذ: کرک انفو، 7 مئی 2014

آفاق حسین انگریزی: Afaq Hussain(پیدائش:31 دسمبر،1939ءلکھنؤ، اتر پردیش، بھارت | وفات:25 فروری 2002ءکراچی، سندھ،)پاکستانی کرکٹر تھے۔[1] جنہوں نے پاکستان کی طرف سے 2 ٹیسٹ میچ کھیلے آفاق حسین لکھنئو اتر پردیش (تب بھارت) میں پیدا ہوئے انہوں نے پاکستان کے ساتھ کراچی ،کراچی یونیورسٹی ،پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز ،پاکستان یونیورسٹیز ،اور پبلک ورکس ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے بھی فرسٹ کلاس میچوں میں شرکت کی۔

ابتدائی دور[ترمیم]

اس تیز رفتار آف اسپنر نے 1957-58ء اور 1973-74ء کے درمیان 67 فرسٹ کلاس میچوں میں حصہ لیا انہوں نے پانچ بار ایک میچ میں دس وکٹیں حاصل کیں۔ تاہم، ایک ایسے وقت میں جب پاکستان کے تیز گیند بازوں نے کام کے بوجھ کا برابر حصہ لینا شروع کر دیا تھا، انگلینڈ میں 1962ء میں آفاق حسین نے 29 میں سے چھ فرسٹ کلاس میچ کھیلے اور 43.61 کی اوسط سے صرف 13 وکٹیں حاصل کیں، اور 1964-65ء میں آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ میں اس نے 14 میں سے صرف پانچ میچ کھیلے درحقیقت، آفاق حسین نے لائل پور (اب فیصل آباد)میں گھاس سے خالی مٹی سے بھری پچ پر ایم سی سی کے خلاف گورنرز الیون کے لیے 89 رنز پر چھ کے ساتھ اپنی ٹیسٹ کیپ جاصل کرنے کا عندیہ دے دیا تھا اگلے سیزن کے قائداعظم فائنل میں، کراچی اے کے لیے کراچی بی کے خلاف نمبر 11ویں نمبر پر انہوں نے 87 رنز بنائے اور والیس میتھایس کے ساتھ پاکستان کی آخری وکٹ کے لیے پہلے تین ہندسوں کی۔شناخت بنائی آفاق حسین نے 1963ء میں پی آئی اے کے زیر اہتمام پاکستان ایگلٹس کے ساتھ دوبارہ انگلینڈ کا دورہ کیا اور اپنی بعد کی زیادہ تر فرسٹ کلاس کرکٹ پی آئی اے کے لیے کھیلی۔ مجموعی طور پر، انہوں نے 19.42 کی اوسط پر 214 وکٹیں حاصل کیں، جس میں 1960-61ء میں کراچی یونیورسٹی کے لیے ریلوے-کوئٹہ کے خلاف 108 رنز کے عوض آٹھ کا بہترین اعداد و شمار بھی شامل ہے، اور 24.54 پر 1,448 رنز بنائے۔ ان کی ایک سنچری 1969-70ء میں لاہور کے باغ جناح میں لاہور بلیوز کے خلاف پی آئی اے کے لیے 122 ناٹ آؤٹ تھی۔ انہوں نے 52 کیچ بھی پکڑے۔

ٹیسٹ کرکٹ[ترمیم]

آفاق حسین کو انگلستان کے خلاف 1961ء میں لاہور ٹیسٹ میں ٹیم کا حصہ بنایا گیا تھا انہوں نے پہلی اننگ میں 10 ناٹ آوٹ بنائے اور انگلینڈ کے ٹیڈ ڈیکسٹر ان کی پہلی اور اس میچ کی اکلوتی وکٹ بنے دوسری اننگ میں انہوں نے 35 ناقابل شکست رنز بنائے تاہم انہیں کوئی وکٹ نہ مل سکی انگلستان یہ میچ پانچ وکٹوں سے جیت گیا آفاق حسین نے اپنا دوسرا اور آخری ٹیسٹ آسٹریلیا کے خلاف میلبورن میں کھیلا جو بغیر کسی نتیجہ کے اختتام پزید ہوا آفاق حسین 8 رنز کے ساتھ ناٹ آوٹ رہے جبکہ باولنگ میں انہیں 45 رنز دینے کے باوجود کوئی وکٹ نہ مل سکی دوسری باری وہ ایک بار پھر ناقابل شکست رہے اس بار انہوں نے 13 رنز جوڑے تھے۔

ایک منفرد ریکارڈ[ترمیم]

آفاق حسین کو یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ انہوں نے 1960ء کی دہائی کے اوائل میں پاکستان کے لیے دو بار کھیلے، اور 10، 35، 8 اور 13 بنائے ان سب اننگز میں کوئی باولر ان کی وکٹ حاصل نہ کر سکا انہوں نے مجموعی طور پر 66 رنز بنائے۔ وہ واحد شخص ہیں جس نے ٹیسٹ میں پانچ اننگز کھیلی اور ان میں سے کسی میں بھی آؤٹ نہیں ہوئے۔

اعداد و شمار[ترمیم]

آفاق حسین نے 2 ٹیسٹ میچوں کی 4 اننگز میں 4 دفعہ ناٹ آئوٹ رہ کر 66 رنز بنائے۔ ناقابل شکست 35 رنز ان کا سب سے زیادہ سکور تھا۔ انہوں نے 67 فرسٹ کلاس میچوں کی 83 اننگز میں 24 مرتبہ ناٹ آئوٹ رہ کر 1448 رنز بنائے۔ 122 ناٹ آئوٹ ان کا سب سے زیادہ سکور اور 24.54 فی اننگ اوسط تھی۔ ایک سنچری اور 5 نصف سنچریاں ان مجموعہ کو تخلیق کرنے میں معاون ثابت ہوئی تھیں۔ بولنگ کے شعبے میں 106 رنز کے عوض ایک وکٹ کے مالک بننے والے آفاق حسین فرسٹ کلاس کرکٹ میں 4156 رنز کے عوض 214 وکٹیں حاصل کرنے میں کامیاب تھے۔ 108/8 ان کی کسی ایک اننگ میں بہترین بولنگ تھی[2]

وفات[ترمیم]

آفاق حسین 25 فروری 2002ء کو کراجی میں 62 سال اور 56 دن کی عمر میں اپنے خالق حقیقی سے جاملے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. انگریزی ویکیپیڈیا کے مشارکین. "Afaq Hussain". 
  2. https://www.espncricinfo.com/player/mohammad-farooq-41284