افسر احمد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
افسر احمد
معلومات شخصیت
پیدائش 5 اپریل 1959  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ضلع ہاوڑہ  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تاریخ وفات 4 اگست 2018 (59 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ کلکتہ  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ شاعر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
P literature.svg باب ادب

افسر احمد (5 اپریل 1959   - 4 اگست ، 2018) ایک ہندوستانی بنگالی مصنف تھا۔ انہوں نے 27 ناول اور دیگر موضوعات میں 24 کتابیں لکھیں۔ [1]

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

احمد 5 اپریل 1959 کو پیدا ہوئے تھے۔ [2] اس نے بنگلہ دیش میں کولکتہ یونیورسٹی میں پوسٹ گریجویٹ تعلیم حاصل کی۔ [3]

کیریئر[ترمیم]

احمد نے ابتدائی زندگی کے دوران بنیادی طور پر شاعری لکھی ، لیکن بعد میں اس نے نثر لکھنا شروع کی۔ ان کا لکھا ہوا بنگالی ''مسلمانیر بائیئر گان'' (بنگالی مسلم شادی بیاہ گانا) 1978 میں پریچوئی میں شائع ہوا تھا۔ [4] ان کا پہلا ناول ''گھر گرہستی 1980 میں شائع ہوا تھا۔ [5] ان کی تحریریں 'Porichoy، Kalantor،' Baromas، Saroswato میں شائع ہوتی تھیں. لکھنے کے علاوہ انہوں نے کچھ سال ادبی رسالہ پروتیکشن میں بھی کام کیا۔ انہوں نے پاسچمبنگا بنگلہ اکیڈمی میں بھی کام کیا۔ [3]

احمد کی کتاب بیبیر میتھیا تالاک و تلکیر بی بی ایبونگ ہولد پکھیر قصہ آسام کے اسکول کے نصاب میں شامل تھا ۔ مرینال سین کی ہدایت کاری میں بننے والی فلم عامر بھوبن ان کے ناول دھن جیوتسنا پر مبنی تھی۔ [6] یہ فلم ان کی آخری ہدایتکاری تھی۔ [7] راتکوٹا ہولو؟ نام کی ایک فلم ان کے ناول ہتیار پرومد جانی پر مبنی تھی۔ [8]

اس نے دوسری زبانوں کی کتابوں کا بنگالی میں ترجمہ بھی کیا۔ اس نے اور کلیم حزیق نے عبد الصمد کے اردو ناول دو گز زمین کا سرلے تن ہاٹ بھومی کے عنوان سے بنگالی ترجمہ کیا ہے۔ انہوں نے ہری موٹوانی کی سندھی کتاب کا بنگالی میں ترجمہ بھی کیا۔ ترجمہ شدہ کتاب کا عنوان اشروی تھا۔ [4]

منتخب کتابیں[ترمیم]

ناول[ترمیم]

  • گھور گیروستی [3]
  • سانُو الیر نجیر جومی' [5]
  • ایٹموپورچی
  • بائتھا کھجے عنا
  • سوپنوسومواش
  • کھونڈو بکھونڈو
  • دھنجیوتسنا [4]
  • بیبیر متھیا تالک او طلاق بیبی ایبونگ ہولد پکھیر قصہ
  • سیئی نکھوج مانشتا
  • دوتیو بیبی
  • ایک اشچورجو بوشکوروں کسا
  • ہوتیار پرومد جانی
  • میٹیابروز کسا
  • ایک گھورسور کیسا
  • ہیر وکھارنی ہے سندری رومنی کسا

ترجمہ[ترمیم]

  • سارے تن ہاٹ بھومی [4]
  • اشروی

ایوارڈ اور پہچان[ترمیم]

احمد کو 1998 میں پسچیمنگا بنگلہ اکیڈمی سے سوم چندا ایوارڈ ملا۔ اس نے اور کلیم حاجیق نے عبدالصمد کے اردو ناول دو گز زمین کا سرلے تن ہت بھومی کے نام سے بنگالی میں ترجمہ کیا۔ اس کام کے لئے انہیں سن 2000 میں بنگالی ترجمہ کے لئے ساہتیہ اکیڈمی ایوارڈ ملا ۔ [9] انہیں 2009 میں بنکیم ایوارڈ بھی ملا تھا۔ [10] انہوں اپنے ناول مئی نکوج مانوشتا کے لیے ادب اکیڈمی ایوارڈ 2017 میں ملا تھا. [11]

موت[ترمیم]

احمد 4 اگست 2018 کو 59 سال کی عمر میں چل بسا۔ [1] [6] [12]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب "প্রয়াত লেখক আফসার আহমেদ". The Wall (بزبان بنگالی). 4 August 2018. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  2. "কিস্সা কথক আফসার আমেদ". Bangla Tribune (بزبان بنگالی). 7 August 2018. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  3. ^ ا ب پ "আফসার আমেদের জীবনাবসান". Aajkaal (بزبان بنگالی). اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  4. ^ ا ب پ ت "আফসার আমেদ: এক নিখোঁজ লেখকের কিস্সা". The Indian Express (بزبان بنگالی). 5 August 2019. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  5. ^ ا ب "মুসলমান সমাজের অসামান্য রূপকার". Aajkaal (بزبان بنگالی). 25 December 2017. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  6. ^ ا ب "আফসার আহমেদ প্রয়াত". Kolkata TV (بزبان بنگالی). 5 August 2018. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  7. "Six Best Films By Mrinal Sen". Outlook. 30 December 2018. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  8. "A writer and a casual worker". The Telegraph. 3 July 2011. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  9. "AKADEMI TRANSLATION PRIZES (1989–2018)". Sahitya Akademi. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  10. "পুরস্কার বিজয়ী বাঙালি লেখক". West Bengal Public Library Network (بزبان بنگالی). اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  11. "AKADEMI AWARDS (1955–2018)". Sahitya Akademi. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019. 
  12. "চলে গেলেন আফসার আহমেদ, শোকের ছায়া রাজ্যে". Ebela (بزبان بنگالی). 4 August 2018. اخذ شدہ بتاریخ 14 نومبر 2019.