ایک نوعمر لڑکی کی ڈائری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ایک نوعمر لڑکی کی ڈائری
Het Achterhuis (Diary of Anne Frank) - front cover, first edition.jpg
1947ء کا پہلا نسخہ
مصنف این فرینک
اصل عنوان Het Achterhuis
مترجم بی۔ ای۔ مویارٹ-ڈوبلیڈے
مصور سرورق ہیلمٹ سالڈن
ملک نیدرلینڈز
زبان ڈچ (ولندیزی)
موضوع
صنف آپ بیتی
ناشر کانٹیکٹ پبلشنگ
تاریخ اشاعت
1947ء
تاریخ اشاعت انگریری
1952ء
OCLC 1432483
LC Class DS135.N6

ایک نوعمر لڑکی کی ڈائری جسے این فرینک کی ڈائری کہا جاتا ہے، این فرینک نامی لڑکی کی ولندیزی زبان میں لکھی ہوئی ڈائری کی کتابی شکل ہے۔ اس لڑکی نے نیدرلینڈز (موجودہ ہالینڈ) پر نازی قبضے کے بعد دو سال چھپ کر گزارے تھے اور یہ ڈائری لکھی تھی۔ 1944 میں اس کا پورا خاندان یہودیوں کے ہاتھ لگ گیا اور برجن بیلسن اذیتی کیمپ میں 1945 میں اس بچی کا انتقال ہوا۔ یہ ڈآئری میپ گیئس کے ہاتھ لگی جس نے اسے اس کے باپ اوٹو فرینک کے حوالے کر دیا۔ اس خاندان میں واحد بچنے والا شخص این فرینک کا باپ ہی تھا۔ تب سے اب تک یہ ڈائری 60 مختلف زبانوں میں چھپ چکی ہے۔

یہ کتاب پہلی بار Het Achterhuis. Dagboekbrieven 14 Juni 1942 – 1 Augustus 1944 (The Annex: Diary Notes 14 June 1942 – 1 August 1944) کے نام سے چھپی۔ یہ اشاعت ایمسٹرڈیم میں کانٹیکٹ پبلشنگ میں ہوئی۔ 1952 میں اس کا انگریزی ترجمہ برطانیہ میں شائع ہوا جو کافی پسند کیا گیا۔ 1955 میں اس پر ڈراما بنایا گیا جس کی آگے چل کر 1959 میں فلمی تشکیل بھی بنائی گئی۔ ایک نوعمر لڑکی کی ڈائری 20ویں صدی میں سرِفہرست رہنے والی کتب میں سے ایک ہے۔[1][2][3][4][5][6]

1947 میں شائع ہونے والی ولندیزی زبان والی کتاب کے ملکیتی حقوق یکم جنوری 2016 کو ختم ہوئے جو مصنفہ کی موت کے ستر سال بعد کی تاریخ ہے۔ یورپی یونین میں ملکیتی حقوق کا یہ عمومی قانون ہے۔ تب سے اس کتاب کا اصلی ولندیزی نمونہ آن لائن دستیاب ہے۔[7]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Best (100) Books of the 20th Century] #8"۔ Goodreads۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  2. "Top 10) definitive book(s) of the 20th century"۔ The Guardian۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  3. "50 Best Books defining the 20th century"۔ PanMacMillan.com۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔[مردہ ربط]
  4. "List of the 100 Best Non-Fiction Books of the Century, #20"۔ National Review۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  5. Books of the Century: War, Holocaust, Totalitarianism۔ New York Public Library۔ 1996۔ آئی ایس بی این 978-0-19-511790-5۔
  6. "Top 100 Books of the 20th century, while there are several editions of the book. The publishers made a children's edition and a thicker adult edition. There are hardcovers and paperbacks, #26"۔ Waterstone's۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  7. Michael Avenant (5 جنوری 2016)۔ "Anne Frank's diary published online amid dispute"۔ It Web۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 8 جنوری 2016۔

بیرونی روابط[ترمیم]