بانس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بانس
صنف بندی

بانس لکڑی کے مدامی سدابہار پودوں کے گروہ سے تعلق رکھتا ہے۔ اس کی کچھ اقسام انتہائی طویل القامت بھی ہوتی ہیں۔ بانس دنیا کا سب سے تیزی سے بڑھنے والا لکڑی کا پودا ہے۔ یہ ایک دن میں اوسطاً تین سے چار فٹ (5۔ 1 سے 0۔ 2 انچ فی گھنٹہ) کی رفتار سے بڑھتا ہے۔ جس کا انحصار زمین کی ساخت، زرخیزی اور موسمی اثرات پر ہوتا ہے۔ یہ مشرقی ایشیاء اور جنوب مشرقی ایشیا میں معاشی اور ثقافتی اعتبار سے نہایت اہم گردانے جاتے ہیں، جہاں ان کا استعمال نہایت کثرت سے باغوں، تعمیراتی سامان اور خوراک کے وسیلے کے لیے بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ ان کی اکیانوے اقسام اور ایک ہزار انواع ہیں۔ یہ طرح طرح کے موسوں میں ملتے ہیں، سردپہاڑی علاقوں سے لے کر منطقہ حارہ کے گرم علاقوں تک۔ یہ تقریباً پورے مشرقی ایشیاء، شمالی آسٹریلیا اور مغربی بھارت میں ہمالیہ تک پائے جاتے ہیں۔[1] اس کے علاوہ یہ صحرائے اعظم افریقا کے ذیلی علاقوں، بر اعظم امریکا کے شمالی مشرقی علاقوں میں، [2] جنوب میں ارجنٹائن اور چلی، جو اُن کے انتہائی جنوب کا علاقہ ہے۔ وہ علاقے جن میں بانس کی فصل نہیں ہوتی، اُن میں یورپ، شمالی افریقا، مغربی ایشیا، کینیڈا، آسٹریلیا کا بیشتر حصہ اور انٹارکٹیکا شامل ہیں۔[3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. این بیسٹرائیکوف، وی۔ کاپوس، آئی۔ لائیسینکو اور سی۔ ایم۔ اے۔ سٹیپلیٹن۔ ایشیا میں جنگلی بانس کی تقسیم و تحفظ کا مقام, نباتیات اور تحفظ, vol. 12 no. 9 (Sep 2003), pp. 1833-1841.
  2. "دیوقامت بانس"۔ نباتیاتی اعدادوشمار۔ امریکی محکمہء زراعت۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  3. ہکسلے۔ اے۔ ایڈ (1992). نئی زرعی لغت۔ ISBN 0-333-47494-5.