بیرل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
روایتی اوک کے بیرل، جو چلی میں بنے ہیں۔
میونچ کے اکٹوبرفیسٹ کے لیے بنے بیرل۔
جدید سٹین لس سٹیل س بنے بیر (شراب) کے بیرل ناٹنگھم، انگلستان کے کیسل راک مائکروبریوری کمپنی کے باہر رکھے ہوئے دیکھے جاسکتے ہیں۔۔

بیرل : ذخیرہ سازی میں استعمال کیے جانے والا خالی سلینڈر شکلا کا بڑا برتن۔ اس کو لکڑی سے بنایا جاتا ہے جسے لوہے یا فولاد کے پتریوں سے لپیٹ کر باندھا جاتا ہے۔

ایک دور میں اس کو شراب، وائن، بیر اور دیگر شراب سے جڑے مائع کو ذخیرہ کرنے کے لیے استعمال کیا جاتا تھا۔ آج کل بھی انہیں مشروبات اور غذائی اشیاء کو ذخیرہ کرنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

اس بیرل کا پیمانہ 159 لیٹر کا ہوتا ہے۔ چھوٹے بیرل کو کیگ کہا جاتا ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

خام تیل کی پیمائش کے لیے استعمال ہونے والا پیمانہ ”بیرل“ وہ لفظ ہے جسے ہم روزانہ کئی بار سنتے اور پڑھتے ہیں۔ ایک بیرل میں تقریباً 159 لیٹر ہوتے ہیں اور یہ نام آج سے تقریباً 6 صدیاں قبل استعمال ہونے والے لکڑی کے ڈبوں کو دیا جاتا تھا جنہیں برطانوی لوگ شراب ذخیرہ کرنے کے لیے استعمال کرتے تھے اور ان کا استعمال 19 ویں صدی تک جاری رہا۔ ایک بیرل کا حجم تقریباً 42 گیلن کہا جا سکتا ہے اور اس کی جہ یہ تھی کہ اتنے وزن کے مائع کو ایک شخص بآسانی اٹھا سکتا تھا۔ انیسویں صدی میں امریکی ریاست پنسلوانیا میں جب تیل کی نقل و حمل کا کاروبار پھیلا تو روایتی بیرل کو تیل کے لیے بھی استعمال کیا جانے لگا۔ پیٹرولیم پروڈیوسرز ایسوسی ایشن نے 1882ءمیں اسے بطور معیار اپنا لیا جس کے بعد یہ ساری دنیا میں خام تیل کے پیمانے کے طور پر استعمال ہونے لگا۔ آج کنوﺅں سے نکلنے والے تیل سے لے کر پائپ لائنوں اور بحری جہازوں کے ذریعے منتقل کیے جانے والے خام تیل کے لیے بھی یہی اصطلاح استعمال ہوتی ہے۔

بیرونی روابط[ترمیم]

  • Origin of "over a barrel"
  •  ہیو چشولم (ویکی نویس.)۔ "Barrelدائرۃ المعارف بریطانیکا (اشاعت 11ویں۔)۔ کیمبرج یونیورسٹی پریس۔
  • Barrel Basics