تبادلۂ خیال:بت سبع

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

بت سُوع[ترمیم]

میرا خیال ہے اس کا نام بت سُوع ہے --ابو السرمد محمد یوسفگفتگو 15:32, 6 اپریل 2017 (م ع و)

ابولسرمد بھائی جی اپ سہی کہہ رہے ہیں کتاب سموئیل اور تواریخ میں بھی یہی لکھا ہے حماد سعید تبادلہ خیال 15:38, 6 اپریل 2017 (م ع و)
میں نے بائبل میں بت سبع پڑھا تھا شاید، ایک دفعہ دوبارہ دیکھ کر صفحہ منتقل کر دیں۔ --امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 12:07, 7 اپریل 2017 (م ع و)
امین اکبر صاحب میں یہاں حوالا دیتا ہوں عہد نامہ قدیم تواریخ اول باب سوم آیت 5:9 کے مطابق:
(5) اور یہ یروشلیِم میں اُس سے پَیدا ہُوئے ۔ سِمعا اور سُوباب اور ناتن اور سُلیمان ۔ یہ چاروں عمّی ایل کی بیٹی بت سُوع کے بطن سے تھے۔ (6) اور اِبحار اور الِیسمع اور الِیفلط۔ (7) اور نُجہ اور نفج اور یفِیعہ۔ (8) اور الِیسمع اور الِید ع اور الِیفلط ۔ یہ نَو۔ (9) یہ سب حرموں کے بیٹوں کے علاوہ داؤُد کے بیٹے تھے اور تمر اِن کی بہن تھی۔( حماد سعید تبادلہ خیال 04:06, 8 اپریل 2017 (م ع و))