جسمانی قربت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

جسمانی قربت (انگریزی: Physical intimacy) ایک طرح کی شہوانی نزدیکی یا چھونا ہے۔ یہ ایک پہل یا رد عمل ہو سکتا ہے، جس میں جذبات کا دو لوگوں کے بیچ عمومًا اظہار کیا جاتا ہے (جس میں دوستی، افلاطونی محبت، رومانی محبت یا جنسی کشش کا اظہار شامل ہے)۔ کسی کی نجی خلا، ہاتھ پکڑنا، معانقہ، بوسہ، پیار سے چھونا یا کوئی جنسی سرگرمی بھی اسی کا حصہ ہے۔ [1]

جسمانی قربت جنسی قربت کی پہل کی طرح ہو کر بھی من و عن وہ اس جیسی نہیں ہے۔ اس میں بنیادی طور پر ایک دوسرے کے ساتھ پیار ہونا ہے ، جس میں گلے لگانے سے لے کر ہاتھ پکڑنے سے لے کر صوفے پر لپیٹنے تک ہر چیز شامل ہوسکتی ہے۔ مثال کے طور پر ، اگر آپ کا ساتھی آپ کی گردن میں مالش کرنے کی کوشش کرتا ہے ، لیکن آپ اس سے دور جا رہے ہیں تو ، اس پر غور کریں کہ یہ ردعمل کہاں سے آ رہا ہے۔ اپنے ساتھی کے رابطے پر اپنے خیالات اور ان کے رد عمل پر توجہ دینے کی ضروت ہوتی ہے۔[2] اس طرح سے کسی شخص کا بار بار یا بلا وجہ ساتھی کی قربت کی کوششوں کا اندیکھا کرنا قربت کے بجائے مروجہ رشتے میں دوری لا سکتا ہے۔


تکنیکی انقلاب اور جسمانی دوری[ترمیم]

جدید دور میں مصروف زندگی، ہر طرف موجود موبائل فونوں کی گونج اور پیشہ ورانہ زندگی کی وجہ سے کئی شادی شدہ اور لیو ان ریلیشن شپ کے جوڑوں میں دوریاں پیدا ہو چکی تھی۔ ایک تحقیق کے مطابق، 2020ء کی کورونا وائرس کی عالمی وبا اور عالمی سطح کی تالا بندی کی وجہ سے کئی جوڑے ایک دوسرے سے مزید قریب ہو گئے کیوں کہ کاروبار ٹھپ ہو گیا تھا اور موبائل فون کی گفتگو کا دور کچھ حد تک موقوف ہو گیا تھا۔[3] تاہم تالا بندی کے ختم کے بعد یہ صورت حال پھر سے پہلے جیسی ہو گئی۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]