دخیل لفظ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

ایک دخیل لفظ ایک ایسا لفظ ہوتا ہے کہ جو کسی ایک میں کسی دوسری زبان (عطیہ دہندہ زبان) سے مستقل طور پر اپنا لیا جائے اور بغیر ترجمہ کیے دوسری زبان میں شامل ہو جائے۔[1] یہ قرابتدار کے برعکس ہے ، جو کہ دو یا دو سے زیادہ زبانوں میں ایسے الفاظ ہیں جو ایک جیسے ہوتے ہیں کیوں کہ وہ ایک اشتقاقیاتی اصلیت رکھتے ہیں، اور لسانیت، جس میں ترجمہ شامل ہوتا ہے۔ مختلف رسم الخطوں والی زبانوں کے دخیل الفاظ عام طور پر نقلِ حرف کر لیے جاتے ہیں (رسم الخطوں کے درمیان)، لیکن ان کا ترجمہ نہیں کیا جاتا۔

اُردُو میں[ترمیم]

اُردُو کے علاوہ زبانوں میں[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Jespersen، Otto (1964). Language. New York: Norton Library. صفحہ 208. ISBN 978-0-393-00229-4. Linguistic 'borrowing' is really nothing but imitation.