سید احمد حسین گیلانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

محبوبِ ذات سید احمد حسین گیلانی سلسلہ قادریہ کے ایک صوفی بزرگ ہیں۔

نام[ترمیم]

سیّد السالکین سیّد احمد حسین گیلانی کنیت مویدالدین ابو محمد اور خطاب محبوبِ ذات ہے۔

ولادت[ترمیم]

آپ کی ولادت باسعادت12ربیع الاول 1314ھ،منڈیر شریف سیّداں ضلع سیالکوٹ میں ہوئی۔

نسب[ترمیم]

آپ کا شجرۂ نسب والد ماجد کی طرف سے امام حسن اوروالدہ ماجدہ کی جانب سے امام حسین کی وساطت سے علی المرتضیٰ سے جا ملتا ہے۔

حلقہ ارادت[ترمیم]

آپ بے مثال و باکمال پیر طریقت تھے۔ طریقت کا مخالف جب بھی کبھی کوئی آتا توطریقت کا قائل ہوجاتااور راہِ حق کوقبول کر لیتا چنانچہ آپ کے حلقہ ارادت میں ہرمکتب فکر کا طالب علم رہا،اہل حدیث،اہل تشیع ،مسیحی، ھندو سکھ غرض ہر ایک دین و مذہب اور فرقے کا پیرو کار آپ کے سلسلہ ارادت میں شمولیت کو فخر سمجھتا تھا ۔

تبلیغ دین[ترمیم]

محبوب ذات تبلیغ اسلام کے لیے ہمہ وقت سفر پر ہی رہا کرتے تھے۔ آپ نے30 سال تک ہندوں میں شمع اسلام روشن کی اور ہندوستان کا شاید ہی کو شہر ایسا ہو گا جہاں آپ نے تبلیغ اسلام کے لیے سفر نہ کیا ہو۔ ان میں بنارس، انبالہ،جبل پور،الہ ٰ آباد،الموؤں لکھنؤ ،لال کڑتی میں تو آپ نے ایک عرصہ تک قیام کیا۔ آپ نے ہندوؤں سکھوں مسیحیوں اور غیر مذاہب کے لوگوں کو مشرف بہ اسلام کیا۔ آپ کی گفتگو تبسم نہاں اور نگاہِ پاک باز میں اِتنی تاثیر موجود تھی کہ لوگوں کے دلوں میں اُتر جاتی اُن کا دل باغ باغ ہو جاتا ۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]