شیخ نوری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

شیخ احمد علی نوری ایک کثیر الجہات مذہبی، سیاسی اور سماجی شخصیت ہونے کے علاوہ شعلہ بیان مقرر، ماہر استاد، شاعر ،جامعۃالنجف سکردو  کے نائب مدیرنیز مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے ڈپٹی سکریٹری جنرل  ہیں۔ نومبر ۲۰۲۱  میں وہ جی بی کونسل کے رکن منتخب ہوئے ہیں۔

شیخ احمد علی نوری گول کے محلہ نورپور کے میر واعظ ،سماجی ومذہبی شخصیت اخوند محمد نوری کے فرزند ہیں۔آپ  کے بارےمیں بلتستان کے مایہ ناز ادیب وشاعر پروفیسر حشمت کمال الہامی (مرحوم)سہ ماہی جریدہ موجِ ِادب میں لکھتے ہیں : حجۃ الاسلام جناب شیخ احمد علی نوری ایک مستند عالم دین، اعلیٰ پائے کے معلم ،علمی وادبی رموز سے آگاہ قلم کار، فنِ شعر وسخن کے نکتہ دان شاعر، اچھے خطیب ، انتظامی صلاحیتوں سے مالامال نوجوان دانشور، عصری شعور اور معاشرتی ضرورتوں کا ادراک رکھنے والے دردمند انسان، منجھے ہوئے نقاد اور مدرسہ جامعۃالنجف کے بانی ووائس پرنسپل ہیں۔

وہ عربی ،فارسی ،اردو اور بلتی زبان وادب کا گہرامطالعہ وذوق رکھتے ہیں۔ دینی ،معاشرتی ،علمی ،سیاسی اور ادبی حلقوں میں ان کی مساعی جمیلہ قابلِ قدر ولائق ستائش ہیں۔علاقائی ،ملکی اور عالمی سیاست پر آپ کی گہری نظر ہے۔[1]

  1. برگشت باد / میرویس موج. University of Arizona Libraries. 1990.