موہانا سنگھ جیتروال

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
موہانا سنگھ جیتروال
تفصیل=

معلومات شخصیت
پیدائش 22 جنوری 1992 (30 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
آگرہ  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ پائلٹ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عسکری خدمات
وفاداری Flag of India.svg بھارت
شاخ  بھارتی فضائیہ

موہانا سنگھ جیتروال ہندوستان کی پہلی خاتون فائٹر پائلٹوں میں سے ایک ہیں۔ [1] [2] [3]انہیں اپنی دو اتحادیوں بھاونا کانتھ اور اونی چترویدی کے ساتھ پہلی خاتون فائٹر پائلٹ قرار دیا گیا۔ تین خواتین پائلٹوں کو جون 2016 میں ہندوستانی فضائیہ کے کمبیٹ سکواڈرن میں شامل کیا گیا تھا۔ انہیں باضابطہ طور پر وزیر دفاع منوہر پاریکر نے حکم دیا تھا[4]۔ جب حکومت ہند نے تجرباتی بنیادوں پر خواتین کے لیے بھارتی فضائیہ میں لڑاکا یونٹ کھولنے کا فیصلہ کیا تو ان تینوں خواتین کو اس پروگرام کے لیے منتخب کیا گیا۔ [5]

زندگی[ترمیم]

بین الاقوامی یوم خواتین 2020 کے موقع پر وزیر اعظم نریندر مودی ناری شکتی ایوارڈ کی تقریب کے دوران۔

موہانا سنگھ نے ایئر فورس اسکول، نئی دہلی سے اسکول کی تعلیم مکمل کی اور گلوبل انسٹی ٹیوٹ آف مینجمنٹ اینڈ ایمرجنگ ٹیکنالوجی، امرتسر ، پنجاب میں الیکٹرانکس اینڈ کمیونیکیشن سے بی ٹیک حاصل کیا۔ اس کے والد پرتاپ سنگھ ہندوستانی فضائیہ میں خدمات انجام دے رہے ہیں اور ان کی والدہ منجو سنگھ ایک ٹیچر ہیں۔ بڑے ہو کر سنگھ کو رولر سکیٹنگ، بیڈمنٹن اور دیگر سرگرمیوں جیسے گانے اور پینٹنگ جیسے کھیلوں کا شوق تھا۔

9 مارچ 2020 کو، انہیں صدر رام ناتھ کووند کے ذریعہ ناری شکتی ایوارڈ سے نوازا گیا [6] [7] ۔

کیریئر[ترمیم]

جون 2019 میں، وہ ہندوستانی فضائیہ میں پہلی خاتون فائٹر پائلٹ بن گئی جو روزانہ ہاک MK132 ایڈوانسڈ جیٹ ٹرینر پر مکمل طور پر کام کرتی ہے۔ اس نے 2019 میں Hawk MK132 ایئر ٹو ایئر اور ایئر ٹو گراؤنڈ جنگی تربیت کے ساتھ 380 گھنٹے سے زیادہ پرواز مکمل کی۔ [8]

مزید جاننے کے لیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Meet The Trio Who Will Be India's First Women Fighter Pilots". NDTV.com. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2017. 
  2. "Latest Current Affairs and News About Bhawana Kanth - Current Affairs Today". currentaffairs.gktoday.in (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2017. 
  3. Mohammed، Syed (2016-06-19). "For IAF's first women fighter pilots Mohana Singh, Bhawana Kanth & Avani Chaturvedi, sky is no limit". The Economic Times. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2017. 
  4. Krishnamoorthy، Suresh (2016-06-18). "First batch of three female fighter pilots commissioned". The Hindu (بزبان انگریزی). ISSN 0971-751X. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2017. 
  5. "Air Force's First 3 Women Fighter Pilots May Fly Mig-21 Bisons From November". NDTV.com. اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2017. 
  6. "Flying MiG-21 Bison matter of pride: Flt Lt Bhawana Kanth". Livemint (بزبان انگریزی). 2020-03-09. اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2020. 
  7. "Keep striving for your dreams with hard work, determination: IAF's women fighter pilots". ANI News (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 21 مارچ 2021. 
  8. "Mohana Singh becomes first woman fighter pilot to fly Hawk advanced jet". New Indian Express. اخذ شدہ بتاریخ 01 جون 2019.