ویمن ایکشن فورم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ویمن ایکشن فورم
قیامستمبر 1981ء
قسمحقوق نسواں کی تنظیم
مرکوزخواتین کے برابر حقوق
مقام
ویب سائٹwafkarachi.com//

ویمن ایکشن فورم (ڈبلیو اے ایف) پاکستان میں خواتین کے حقوق کی تنظیم ہے۔ ویمن ایکشن فورم کا قیام کراچی میں ستمبر 1981 میں کیا گیا تھا۔ ڈبلیو اے ایف کو حدوود آرڈیننس تعزیراتی ضابطہ کے نفاذ کے جواب میں اور عام طور پر معاشرے میں خواتین کے مقام کو مستحکم کرنے کے لئے تشکیل دیا گیا تھا۔ کراچی میں سول سوسائٹی کی تنظیموں کی خواتین ڈبلیو اے ایف کی بانی ممبر بن گئیں جنھیں بعد میں ایک سال کی مدت میں جلد ہی لاہور (پنجاب) اور اسلام آباد (پاکستان کے دارالحکومت) کے ابواب میں شامل کیا گیا۔ کراچی، لاہور اور اسلام آباد میں اس گروپ نے اجتماعی قیادت پر اتفاق کیا اور پالیسی بیانات مرتب کیے اور خواتین کی قانونی حیثیت کے تحفظ کے لئے سیاسی عمل میں مصروف رہا۔[1][2][3][4]

اہم ممبران[ترمیم]

نگہت سعید خان، ڈبلیو اے ایف کے بانی ممبران میں شامل ہیں۔[5]نگار احمد نے ۱۹۸۲ء میں اسلام آباد اور لاہور میں ڈبلیو اے ایف کی شاخیں قائم کرنے میں مدد کی تھی۔[6]امر سندھو نے عرفانہ ملاح کے ساتھ مل کر حیدرآباد میں سنہ 2008 میں ویمن ایکشن فورم (ڈبلیو اے ایف) کے باب کا آغاز کیا تھا۔ تب سے وہ ڈبلیو اے ایف کے ساتھ سرگرمی سے کام کر رہی ہیں۔[7][8][9][10] عافیہ شہربانو ضیا، مشہور مصنفہ، کراچی سے ڈبلیو اے ایف کی سرگرم رکن ہیں۔

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Women's Action Forum (WAF)[مردہ ربط]
  2. Women empowerment: The spring of hope Dawn (newspaper), Published 14 February 2016, Retrieved 21 March 2019
  3. Saigol، Dr. Rubina (March 2016). "Feminism and the Women's Movement in Pakistan Actors, Debates and Strategies" (PDF). اخذ شدہ بتاریخ 21 مارچ 2019. 
  4. The Status of Women and the Women's Movement
  5. https://www.independenturdu.com/node/44201
  6. "Remembering a Revolutionary". Newsline (بزبان انگریزی). 27 February 2017. 
  7. "Women decide to fight back". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 25 February 2009. 
  8. Correspondent، The Newspaper's Staff (18 June 2020). "Call for end to extremist tendencies". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 
  9. Reporter، The Newspaper's Staff (12 July 2012). "Demand for probe into attack on SU teachers". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 
  10. Correspondent، The Newspaper's Staff (10 July 2012). "Amar Sindhu injured in attack". DAWN.COM (بزبان انگریزی).