کتب خانہ رگلان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
قلعہ رگلان

کتب خانہ رگلان ایک کتب خانہ ہے جو قلعہ رگلان، منموتھ شائر کاؤنٹی، جنوب مشرق ویلز میں واقع ہے۔[1][2][3][4]

کتب خانہ میں قدیم تاریخی ویلش مسودات کا سب سے وسیع مجموعہ موجود ہے۔[5] جس میں Dafydd ap Gwilym,[6] Taliesin، Rhys Goch، Jonas of Menevia، Ederyn the Golden-tongued، Einion the Priest، Cwtta Cyvarwydd، Sion Cent اور Dafydd Ddu o Hiraddug دیگر بہت ساروں کا کام شامل ہے۔[7]

اگست 1646ء میں اولیور کرامویل کی زیر قیادت پارلیمانی افواج نے، انگریزی خانہ جنگی کے دوران میں اسے تباہ کیا اور لوٹا۔[8][9] کتب خانہ رگلان کی تباہی کو "ویلز ادی کو ناقابل تلافی نقصان کے طور پر دیکھا گيا"۔[10]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. William Beattie (1851). The Castles and Abbeys of England: From the National Records, Early Chronicles, and Other Standard Authors : Illustrated by Upwards of Two Hundred Engravings. Virtue, Spalding. صفحات 352–. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 19 اکتوبر 2012. 
  2. Iolo Morganwg؛ J. Williams Ab Ithel؛ John Williams؛ John Matthews (2004). The Barddas of Iolo Morganwg: A Collection of Original Documents, Illustrative of the Theology, Wisdom, and Usages of the Bardo-Druidic System of the Isle of Britain. Weiser Books. صفحات 7–. ISBN 978-1-57863-307-4. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اکتوبر 2012. 
  3. The Four Ancient Books of Wales. Abela Publishing Ltd. January 2011. صفحات 20–. ISBN 978-1-907256-92-9. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اکتوبر 2012. 
  4. Iolo Morganwg؛ Owen Jones؛ Society for the Publication of Ancient Welsh Manuscripts, Abergavenny (1848). Iolo manuscripts: A selection of ancient Welsh manuscripts, in prose and verse, from the collection made by the late Edward Williams, Iolo Morganwg, for the purpose of forming a continuation of the Myfyrian archaiology; and subsequently proposed as materials for a new history of Wales. W. Rees; sold by Longman and co., London. صفحات 424–. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اکتوبر 2012. 
  5. The Metropolitan. James Cochrane. 1836. صفحات 1–. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اکتوبر 2012. 
  6. Benjamin Heath Malkin (1807). The scenery, antiquities and biography of South Wales: from materials collected during two excursions in the year 1803. Longman, Hurst, Rees, and Orme. صفحات 389–. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اکتوبر 2012. 
  7. Lewis Spence (1 March 2004). Mysteries of Celtic Britain. Kessinger Publishing. صفحات 100–. ISBN 978-0-7661-8421-3. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اکتوبر 2012. 
  8. John R. Kenyon (1 January 2003). Raglan Castle. Cadw Welsh Historic Monuments. ISBN 978-1-85760-169-5. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اکتوبر 2012. 
  9. Sharon Turner (1841). The history of the Anglo-Saxons from the earliest period to the Norman conquest. Carey & Hart. صفحات 498–. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اکتوبر 2012. 
  10. Haneirin Gwawdrydd (1820). The Gododin, and the Odes of the months, tr. by W. Probert. صفحات 24–. 7 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 20 اکتوبر 2012. 

بیرونی روابط[ترمیم]