گاسولاس کا گرجاگھر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
گاسولاس کا گرجاگھر
گاسولاس کا گرجاگھر
Iglesia de Nuestra Señora de la Purificación (Gazólaz)
مقامگاسولاس, سپین
ملکسپین
فن تعمیر
حیثیتیادگار

گاسولاس کا گرجاگھر گاسولاس (Gazólaz) گاؤں میں واقع ہے جو سیزور میونسپالٹی میں سپین کا ایک تاریخی گرجاگھر ہے- اسے بےن دے اتےرےس کلچرل کے زمرے میں جون 1931 میں شامل کیا گیا تھا-[1]

تاریخ[ترمیم]

اس گرجا کی تعمیر رومنیسک سٹائل میں ہوئی تھی- اس کا تعمیری کام 13 ویں صدی میں شروع ہوا تھا[2][3][4] پر کچھ علما کرام کا یہ ماننا ہے یہ گرجا 11 ویں صدی کا ہے-[5][6][7][8][9] اس کو نوارے کے اہم گرجا گھروں میں سے ایک سمجھا جاتا ہے- [10][11] یہ سنت جان کی تعمیر فقیہوں کی طرف سے بنایا گیا تھا۔ امکان ہے کہ اس کو پیدرو ایكسيمناز کے حکم پر بنایا گیا تھا‘[3][12] یاں پھر اس کے ادار والد کے کہنے پر بنایا گیا-[13][14]

نگارخانہ[ترمیم]

ریتابلوس
Retablo lateral de la Virgen del Rosario
Retablo mayor. 
Retablo lateral de San José

بیرونی ذرایع[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Database of protected buildings (movable and non-movable) of the Ministry of Culture (Spain)|Ministry of Culture of Spain .
  2. "Turismo Navarra - Iglesia de Gazólaz". 07 جنوری 2019 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 30 اکتوبر 2014. 
  3. ^ ا ب De Lojendio، Luis María (1995). ویکی نویس: Encuentro. Rutas románicas en Navarra. صفحہ 61. ISBN 84-749-0378-5. 
  4. Actas del séptimo Congreso Internacional de Estudios pirenaicos. 1983. صفحہ 13. 
  5. Clavería Arza، Carlos (1971). ویکی نویس: Imprenta Popular. Historia del Reino de Navarra. صفحہ 600. ISBN 9788470810022. 
  6. De Madrazo، Pedro (1886). ویکی نویس: D. Cortezo y ca. Navarra y Logroño. صفحہ 508. 
  7. Naval، Francisco (1904). ویکی نویس: J. Sáenz. Elementos de arqueología y bellas artes para uso de universidades y seminarios. صفحہ 233. ISBN 9788470810022. 
  8. Biurrun Sótil، Tomás (1936). El arte románico en Navarra: o, Las órdenes monacales, sistemas constructivos y monumentos cluniacenses, sanjuanistas, agustinianos, cistercienses y templarios. 
  9. Lampérez y Romea، Vicente (1999). Historia de la arquitectura cristiana espyearla en la edad media. صفحہ 616. ISBN 84-7846-905-2. 
  10. Biurrun Sótil، Tomás (1936). El arte románico en Navarra: o, Las órdenes monacales, sistemas constructivos y monumentos cluniacenses, sanjuanistas, agustinianos, cistercienses y templarios. صفحہ 425. 
  11. Biurrun Sótil، Tomás (1928). Inventario de la riqueza artística de la Diócesis de Pamplona. صفحہ 152. 
  12. Biurrun Sótil، Tomás (1936). El arte románico en Navarra: o, Las órdenes monacales, sistemas constructivos y monumentos cluniacenses, sanjuanistas, agustinianos, cistercienses y templarios. صفحہ 160. 
  13. Biurrun Sótil، Tomás (1936). El arte románico en Navarra: o, Las órdenes monacales, sistemas constructivos y monumentos cluniacenses, sanjuanistas, agustinianos, cistercienses y templarios. صفحہ 160. 
  14. Galdiano، Uranga (1973). ویکی نویس: Aranzadi. Arte medieval navarro: Arte gótico, Volumen 1; Volumen 4. صفحہ 134. ISBN 9788450055863.