ہگ بوسون

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

ہیگ بوسون، ذراتی طبیعیات میں ایک فوضی عددیہ عنصری ذرہ (scalar elementary particle) ہے جس کے وجود کی پیشگوئی معیادی نمونہ کے نظریہ سے حاصل ہونے والے مشاہدات کی بنیاد پر کی جاتی ہے۔ معیادی نمونہ میں پائے جانے والے ذرات میں یہ واحد ذرہ ہے کے جس کو ابھی تک دیکھا تو نہیں جاسکا ہے مگر یہ دیگر بنیادی ذرات کی کمیئت کے منبع کی وضاحت کرنے میں اہم ترین کردار ادا کرتا ہے (اس کا مطلب آسان الفاظ میں یوں کہ لیں کہ یہ اپنے وجود کی بلاواسطہ شہادت مہیا کرتا ہے۔)، کمیئت کی تشریح بے وزن فوٹون اور بہت وزنی ڈبلو اور زیڈ بوسون کے سلسلے میں نہایت واضع ہوکر سامنے آجاتی ہے۔ ان کے وجود کے بارے میں سب سے پہلے پیشگوئی ایک انگلستانی طبیعیاتداں، پیٹر ہگ (Peter Higgs) نے 1964 میں کی تھی اور اسی کے نام کی نسبت سے ان ذرات کو، ہگ بوسون کہا جاتا ہے۔