تاج الدین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
Padlock.svg اس صفحہ کو ترامیم کیلیے نیم محفوظ کر دیا گیا ہے اور صارف کو اندراج کر کے داخل نوشتہ ہونا لازم ہے؛ (اندراج کریں یا کھاتہ بنائیں)
Suspected hoax اس مضمون کی غیرجانبداری اور/ یا اس میں شامل معلومات کی صحت شکوک سے بالاتر نہیں.


  • یہ مضمون انگریزی ویکیپیڈیا سے ہو بہو ترجمہ ہے، مضمون میں موجود بیانات پر تاریخی اور مستند حوالہ جات درکار ہیں۔
بمطابق 1900ء : تاج الدین کی ایک تصویر

تاج الدین (21 جنوری 1861ء تا 17 اگست 1925ء) کی پیدائش ہندوستان میں ہوئی اور ماننے والے صوفی اور گرو جی وغیرہ مانتے ہیں۔ کہا جاتا ہے کہ رہائش ناگپور میں اختیار کی۔ نوعمری میں یتیم ہونے کے بعد پرورش نانی اور چچا عبدالرحمان نے کی۔ ناگپور کے قریب کمپتی (Kamthi) کے ایک مدرسے میں بھی داخلہ لیا جہاں ملاقات عبداللہ نامی ایک شخص سے ہوئی اور اسی شخصیت سے روحانی طریقوں کے بارے میں معلومات حاصل کیں ، تاج الدین کے لیۓ مخصوص ایک موقع روۓ خط کے مطابق یہیں سے یکتائی (adwaita) حاصل کی[1]جسکا مطلب سنسکرت میں زمان و مکاں سے ایک ہوجانے کا اور خالق کی ذات اور خود میں فرق باقی نہیں رہنے کا ہوتا ہے [2]

اپنی جوانی میں تاج الدین کو ایک مرتبہ اپنا لباس اتار کر مکمل طور پر برہنہ ہو کے ایک برطانوی پولو کے کھیل کے قریب چلتے پھرتے پایا گیا جسے دیکھ وہاں موجود خواتین مبہوت رہ گئیں اور تاج الدین کو ناگپور کے ایک تیمارستان مجانین (insane asylum) میں داخل کردیا گیا[3] [4]۔ تیمارستان میں داخل دیگر مجانین (جمع برائے مجنون) و دماغی مریضوں (جن میں سے کچھ میں دنیاوی شعور باقی بھی ہوگا) نے تاج الدین کو گـرو و پیر یا پہنچا ہوا مشہور کردیا اور یہ گونج تیمارستان کے باہر بھی پہنچی تو لوگ (جن میں اکثر اپنے اپنے مریضوں کے متعلقین ہی ہونا امکان غالب ہے) دیدار و درشن کے لیۓ آنے لگے۔ سزا معاف ہونے کے بعد تیمارستان کے نگہبان نے تاج الدین کے نام سے مشہوری حاصل کرنے کی خاطر اپنے یہاں رہنے کو کہا ، تاج الدین نے زیادہ عرصہ اسکے پاس رہنے کے بجاۓ خود الگ اپنا آشرام (سنسکرت برائے خانقاہ) قائم کرنے کو ترجیح دی۔

تاج الدین بابا نامی موضوع مضمون شخص کا اندراج ان افراد میں کیا جاتا ہے جنہوں نے اسلام میں پیدا ہونے والے ایک غیراسلامی مکتبۂ فکر (تصوف) کو غلط استعمال کرتے ہوئے اسلام کو دوسرے مذاہب (یہاں ہندومت) میں مدغم کرنے کی کوششیں کیں[5]۔ تاج الدین بابا کو ہندو دیوتا (God) کی حیثیت سے پہچاننے والے افکار بھی پائے جاتے ہیں ، اس خدا یا دیوتا کا نام دتاترےیا (dattatreya) بیان کیا جاتا ہے[6]۔



حوالہ جات

  1. ^ تاج الدین کے لیۓ مخصوص ایک موقع روۓ خط پر adwaita کا تذکرہ۔
  2. ^ سنسکرت کی لغت میں adwaita کے معنی.
  3. ^ ShreeSwami.org
  4. ^ Mausoleum of Hazrat Baba Tajuddin Aulia
  5. ^ Unravelling the enigma Shirdi Sai Baba in the light of sufism by: Marianne Warren
  6. ^ Shah Datta - A Hindu god in Muslim grab پیڈی ایف ملف

بیرونی روابط