آخری لڑکی (یاداشت)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
The Last Girl: My Story of Captivity, and My Fight Against the Islamic State
The Last Girl-My Story of Captivity, and My Fight Against the Islamic State.jpeg
مصنف نادیہ مراد، جینا کراجیسکی[1]
ملک ریاستہائے متحدہ امریکا[1]
زبان انگریزی[1]
صنف یاداشتیں[1]
اشاعت 2017[1]
ناشر پینگوئن[1]
آئی ایس بی این 978-1-5247-6043-4

آخری لڑکی: میری اسیری اور دولتِ اسلامیہ سے جنگ کی کہانی ایک خود نوشت ہے جو 2018ء نوبل امن انعام یافتہ عراقی یزیدی خاتون نادیہ مراد کی تصنیف ہے۔ اس میں مصنفہ نے عراقی خانہ جنگی کے ان ایام کا ذکر کیا ہے جب دولتِ اسلامیہ (داعش) نے اسے اغوا کرکے لونڈی بنا کر رکھا اور جنسی و جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج نادیہ مراد۔ The Last Girl: My Story of Captivity, and My Fight Against the Islamic State (انگریزی زبان میں)۔ پینگوئن بکس۔ آئی ایس بی این 978-1-5247-6043-4۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔